Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / خاتون کو 14سیکنڈ سے زائد گھورنے پر جیل کی سزا

خاتون کو 14سیکنڈ سے زائد گھورنے پر جیل کی سزا

کیرالا کے ایک عہدیدار کے تبصرہ پر تنازعہ
کوچی۔/16اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) کیرالا کے ایک اعلیٰ عہدیدار کا یہ تبصرہ تنازعہ کا شکار ہوگیا کہ اگر کوئی 14سیکنڈ سے زائد کسی خاتون کو ہراساں ( چھیڑ چھاڑ ) کرتا ہے تو قانون کے بعض دفعات کے تحت اسے جیل کی سزا ہوسکتی ہے۔ سماجی میڈیا پر یہ ریمارک عام ہونے کے بعد  ریاستی وزیر نے اسے اشتعال انگیز قرار دیا ہے۔ ریاستی آبکاری کمشنر رشی راج سنگھ نے کہا ہے کہ قانون میں یہ گنجائش ہے کہ اگر کوئی شخص 14 سیکنڈ سے زائد کسی خاتون کو ہراساں و پریشاں کرتا ہے تو اسے جیل کی ہوا کھانی پڑتی ہے۔ اگر کوئی ایسا واقعہ پیش آتا ہے تو مذکورہ قانون کا استعمال کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے یہ تبصرہ دو یوم قبل یہاں ایک چیریٹبل ٹرسٹ کے پروگرام میں کیا تھا۔ انہوں نے خواتین کو مشورہ دیا کہ غنڈوں کی ہراسانی کے خلاف اٹھ کھڑے ہوجائیں اور حفاظت خود اختیاری کے تحت اپنے بیاگس میں چاقو اور مرچ اسپرے رکھیں جس پر سوشیل میڈیا میں متضاد ردعمل ظاہر کیا جارہا ہے۔ ریاستی وزیر اسپورٹس ای پی جیہ راجن نے اس بیان کو اشتعال انگیز قرار دیا ہے اور کہا کہ اگر بیورو کریٹس کو اس طرح کا ریمارک نہیں کرنا چاہیئے جس کی قانون میں کوئی گنجائش نہیں ہے اورکمشنر آبکاری کا جائزہ لینے کے بعد ضروری کارروائی کی جائے گی۔ دریں اثناء رشی راج سنگھ کے تبصرہ پر سوشیل میڈیا میں کئی ایک لطیفے اور مزاحیہ ردعمل ظاہر کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ اگر کوئی شخص رشتہ کے سلسلہ میں لڑکی کے گھر جاکر 14سیکنڈ سے زائد اسے گھورتا ہے تو کیا وہ جیل جائیگا؟ اگر کوئی شخص رنگین چشمہ ( سن گلاس ) لگاکر خاتون کو14سیکنڈ سے زائد یکھتا ہے تو اسے کس طرح سزا دی جائے گی۔

TOPPOPULARRECENT