Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / خادماؤں کیلئے ماہانہ 9000روپئے تنخواہ لازمی

خادماؤں کیلئے ماہانہ 9000روپئے تنخواہ لازمی

حکومت کی نئی لیبر پالیسی میں سالانہ 15دن کی رخصت کا لزوم
نئی دہلی ۔16اگست ( سیاست ڈاٹ کام ) خادماؤں کیلئے ماہانہ 9000روپئے تنخواہ کی ادائیگی کو لازمی قرار دیا جارہا ہے جو لوگ اپے گھروں میں ہمہ وقتی گھریلو خادمہ یا ہلپر کی خدمات حاصل کرنے کے خواہاں ہیں انہیں ماہانہ کم از کم 9000روپئے ادا کرنے ہوں گے اور سالانہ 15دن کی رخصت کے علاوہ زچگی کیلئے خاص رخصت بھی دینی ہوگی ۔ خادماؤں کے مفادات کا تحفظ کرنے کیلئے این ڈی اے حکومت نے ان خصوصیات کے ساتھ ایسے قومی پالیس بنانے پر غور کررہی ہے ۔ اس کے علاوہ خادماؤں کو سوشل سیکیورٹی کے بشمول کئی فوائد بھی فراہم کرنے کی تیاری کی جارہی ہے اور جنسی ہراسانی اور بندھوا مزدوری کے خلاف سخت دفعات وضع کئے جائیں گے ۔ قومی پالیسی برائے ڈومسٹک ورکرس کو بہت جلد مرکزی کابینہ میں پیش کیا جائے گا ۔گھریلو ملازمین جن کا مستقبل غیریقینی حالات کا شکار رہتا ہے اور عمر کے ساتھ ان میں کمزوری بھی شروع ہوجاتی ہے اور انہیں نوکری سے نکال دیا جاتا ہے ۔ اب انہیں سوشل سیکیورٹی اسکیم کے تحت آجرینیا مالک مکان کو پابند کرتے ہوئے تعاون کا عمل بھی لازمی قرار دیا جائے گا ۔ اس پالیسی کے ذریعہ گھریلو ملازمین کی مدد کیجائے گی تاکہ وہ اپنی تعلیم کے حصول کو بھی برقرار رکھ سکیں ۔ ان کیلئے ایک محفوظ کام کا ماحول فراہم کیا جائے گا ۔ ایک دوسرے کو ملاکر اجتماعی طور پر مفادات کا تحفظ کیا جائے گا ۔ اس سلسلہ میں ایک مسودہ قانون تیار کیا گیا ہے ۔ ڈائرکٹر جنرل لیبر ویلفیر نے مسودہ تیار کیا ہے ۔ اس مسودہ کو گذشتہ شعبہ ‘ وزیر لیبر بنڈارو دتاتریہ کو پیش کیا گیا ۔ بنڈارو دتاتریہ نے کہا کہ ڈومسٹک ورکرس پالیسی کو وضع کر کے ان خادماؤں اور گھریلو ملازمین کے ساتھ ہونے والی ہراسانی کو ختم کردیا جائے گا ۔

TOPPOPULARRECENT