Tuesday , September 26 2017
Home / جرائم و حادثات / خادم الحجاج کے انتخاب کے نام پر بیروزگار نوجوانوں کو جھانسہ

خادم الحجاج کے انتخاب کے نام پر بیروزگار نوجوانوں کو جھانسہ

سعودی عرب کیلئے تین ماہ کا ویزا اور 90 ہزار روپئے تنخواہوں کی لالچ، لاکھوں روپئے ہڑپ ، ریاکٹ کا انکشاف

محمد علیم الدین
حیدرآباد 25 اگسٹ ۔ شہر میں روزگار کے نام پر مختلف انداز سے جھانسہ دینے کے واقعات کے بعد اب ایک نئے انداز سے مذہب کا استعمال کیا جارہا ہے۔ چونکہ اب حج 2015 ء سیزن کا آغاز ہورہا ہے۔ عازمین حج کی خدمت کے نام پر روزگار کے جھانسہ کا ایک بڑا ریاکٹ بے نقاب ہوگیا۔ تاخیر سے منظر عام پر آئے اس واقعہ کے بعد پولیس اسٹیشنوں سے رجوع ہونے والوں کی تعداد وقت کے لحاظ سے بڑھتی جارہی ہے۔ عازمین حج کی خدمت کے لئے درکار خادم الحجاج کے مواقع فراہم کرنے کا جھانسہ دے کر سینکڑوں بے روزگار افراد کو دھوکہ دیا گیا۔ پرانے شہر کے علاقہ مادنا پیٹ اور سنتوش نگر ہی تک محدود سمجھے جارہے اس دھوکہ دہی کا معاملہ بین ریاستی دھوکہ دہی کا ریاکٹ تصور کیا جارہا ہے۔ حجاج کی خدمات کے ساتھ ساتھ بہترین روزگار کے علاوہ حجاج کی خدمت کے عظیم موقع کی آس بتاکر ان بے روزگار نوجوانوں کا استحصال کیا گیا۔ تاہم متاثرہ نوجوانوں کی شکایت پر سنتوش نگر اور مادنا پیٹ پولیس اسٹیشنس میں مقدمات درج کرلئے گئے ہیں۔ باوثوق ذرائع کے مطابق ان بے روزگار نوجوانوں کو دھوکہ دینے کے لئے روزگار اور عازمین کی خدمات کے تعلق سے جو تشہیر کی گئی اس کے لئے کسی قسم کی کوئی تشہیر اخبار یا ٹیلی ویژن میں اشتہار نہیں دیا گیا بلکہ مساجد اور اجتماعات میں زبانی تشہیر کی گئی اور ایک دوسرے ساتھی اور رشتہ دار نوجوان عازمین کی خدمت کے نام پر ان دھوکہ بازوں کے جال میں آسانی سے پھنس گئے اور ان کی ایماء پر بھاری رقم ان کے حوالہ کردی۔ ذرائع کے مطابق اس دھوکہ باز ریاکٹ کی دھوکہ دہی کا شکار مزید بے روزگار نوجوان منظر عام پر آسکتے ہیں جو وقت کے ساتھ پولیس سے رجوع ہورہے ہیں۔ (سلسلہ صفحہ 7 پر)

TOPPOPULARRECENT