Tuesday , September 26 2017
Home / کھیل کی خبریں / خالدلطیف اور شرجیل خان کو دوبارہ نوٹس جاری لاہور۔18اپریل

خالدلطیف اور شرجیل خان کو دوبارہ نوٹس جاری لاہور۔18اپریل

(سیاست ڈاٹ کام) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے سکیورٹی اور ویجیلنس ڈپارٹمنٹ نے اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں مبینہ طور پر ملوث خالد لطیف اور شاہ زیب حسن کو دوبارہ نوٹس آف ڈیمانڈ جاری کر کے طلب کر لیا ہے۔یہ نوٹس آف ڈیمانڈ پی سی بی کے اینٹی کرپشن کوڈ کے ا?رٹیکل 4.3 کے تحت جاری کیے گئے جس کے تحت دونوں کھلاڑیوں کو معاملے کی مزید تحقیقات کیلئے پیش ہونا ہو گا۔یاد رہے کہ پاکستان سوپر لیگ کے دوسرے ایڈیشن کے پہلے دن ہی اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل منظر عام پر آیا تھا جس میں مبینہ طور پر ملوث ہونے پر اسلام آباد یونائیٹڈ کے کھلاڑیوں شرجیل خان اور خالد لطیف کو وطن واپس بھیج دیا گیا تھا۔پاکستان کرکٹ بورڈ نے شاہ زیب حسن اور محمد عرفان کو بھی معطل کردیا گیا جبکہ عرفان نے سٹہ بازوں کی جانب سے رابطہ کرنے کی تصدیق کرتے ہوئے اس بارے میں اطلاع نہ دینے کا اقبال جرم کیا تھا جس پر انہیں ایک سال کیلئے معطل کرتے ہوئے دس لاکھ روپے جرمانہ بھی عائد کیا گیا ہے۔ اوپنر ناصر جمشید کو اسپاٹ فکسنگ مقدمہ میں ملوث ہونے کے شبے میں برطانیہ میں تفتیشی اداروں نے یوسف نامی سٹہ باز کے ہمراہ گرفتار کیا تھا لیکن انہیں ضمانت پر رہا کر کے پاسپورٹ ضبط کر لیا گیا اور ان سے بھی معاملے کی تفتیش جاری ہے۔ شاہ زیب حسن اور خلد لطیف پر فرد جرم عاید کیا گیا تھا لیکن دونوں نے صحت جرم سے انکار کردیا تھا اور اب بورڈ نے ایک مرتبہ پھر دونوں کھلاڑیوں کو نوٹس آف جاری کیا ہے جس کے تحت ان سے اثاثوں کی تفصیلات اور دیگر اہم معلومات اکٹھا کی جا سکتی ہیں۔پی سی بی اینٹی کرپشن کوڈ کی مزید خلاف ورزی کے الزام میں دونوں کھلاڑیوں سے مزید پوچھ گچھ کی جائے گی اور سیکیورٹی اور ویجیلنس کمیٹی ان سے سوالات کرے گی۔خالد لطیف کو 26 اپریل کو طلب کیا گیا ہے جبکہ شاہ زیب حسن کا انٹرویو 27 اپریل کو لیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT