Thursday , September 21 2017
Home / ہندوستان / خالصتان لبریشن فورس کا مفرور صدر دہلی میں گرفتار

خالصتان لبریشن فورس کا مفرور صدر دہلی میں گرفتار

جیل سے فرار ہونے کے سنسنی خیز واقعہ پر دہلی پولیس کی کارروائی
نئی دہلی ؍چندی گڑھ ۔ 28 نومبر ۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) خالصتان لبریشن فورس کے سربراہ ہرمیندر سنگھ منٹو کو آج دہلی ریلوے اسٹیشن پر پکڑلیا گیا جو گزشتہ روز اپنے پانچ قیدیوں کے ساتھ پٹیالہ کی نبھا جیل سے فرار ہوگئے تھے ۔ پنجاب پولیس کے ایک سینئر عہدیدار نے آج چندی گڑھ میں کہاکہ ’’منٹو کو دہلی پولیس نے دہلی ریلوے اسٹیشن پر پکڑلیا ہے ‘‘ ۔ انھوں نے کہا کہ پنجاب پولیس کی طرف سے فراہم کردہ خفیہ معلومات کی بنیاد پر دہلی پولیس نے اس خوفناک دہشت گرد کو گرفتار کیا ہے ۔ انھوں نے کہاکہ نبھا کو واپس لانے کیلئے پنجاب پولیس کی ایک ٹیم دہلی روانہ ہوگئی۔ جیل سے فرار کیس میں یہ دوسری گرفتاری ہے ۔ یوپی پولیس نے جیل توڑکر فرار ہونے کے اس دیدہ دلیرانا واقعات کے اصل سرغنہ پرمیندر سنگھ کو کل شام گرفتار کی تھی۔ یوپی کے ضلع شاملی کے موضع کیرانا میں پرمیندر کو اس وقت گرفتار کیا گیا تھا جب پولیس نے ایک مشتبہ ٹویوٹا فرچونر گاڑی کو روک کر اُس کی تلاشی لی تھی ۔ منٹو گزشتہ روز دن دہاڑے جیل توڑکر فرار ہوگیا تھا جس کے ساتھ پانچ ساتھی بھی تھے ۔ اس سنسنی خیز واقعہ میں مسلح افراد نے جو پولیس وردی میں ملبوس تھے جیل کے پہرہ داروں کو حکم دیتے ہوئے ایک کوٹھی میں دیگر قیدیوں کے ساتھ بند کردیا تھا اور کئی بلٹس فائر کرتے ہوئے وہاں سے فرار ہوگئے تھے ۔ عہدیداروں نے کہا ہے کہ دیگر مفرور قیدیوں کو پکڑنے کی کوششیں جاری ہیں۔ منٹوکو نومبر 2014 ء میں تھائی لینڈ سے ملک بدر کئے جانے کے بعد پنجاب پولیس نے گرفتار کیا تھا ۔ وہ دہشت گردی کے 10 واقعات میں ملوث ہے ۔ خالصتان لبریشن فورس کے سربراہ منٹو کو اس کے ایک قریبی ساتھی گرپریت سنگھ توپی کے ہمراہ تھائی لینڈ سے لایا گیا تھا ۔ دہلی کے اسپیشل کمشنر پولیس اسپیشل سل اروند دیپ نے کہاکہ اس خطرناک دہشت گرد کو دہلی کے نظام الدین ریلوے اسٹیشن پر گرفتار کیا گیا ۔ ہرمیندر سنگھ منٹو کو دہلی کی عدالت نے 7 دن کیلئے پولیس تحویل میں دیدیا۔

TOPPOPULARRECENT