Tuesday , September 26 2017
Home / دنیا / خامنہ ای کی نیوکلیئر معاہدہ نذر آتش کرنے کی دھمکی

خامنہ ای کی نیوکلیئر معاہدہ نذر آتش کرنے کی دھمکی

تہران۔ 15 جون (سیاست ڈاٹ کام) ایرانی روحانی پیشواء علی خامنہ ای نے امریکی صدارتی امیدواروں کو خبردار کیا ہے کہ ایران بڑے ممالک کے ساتھ ہونے والے نیوکلیئر معاہدے سے دست بردار ہو سکتا ہے۔ یہ بات منگل کے روز ایک سرکاری ویب سائٹ پر بتائی گئی۔خامنہ ای نے باور کرایا کہ ” ہم نیوکلیئر معاہدے کی خلاف ورزی نہیں کر رہے تاہم امریکی صدارتی انتخابات کے امیدوار معاہدے کو پھاڑ دینے کی دھمکیاں دے رہے ہیں۔ اگر انہوں نے ایسا کیا تو ہم اس (معاہدے) کو نذر آتش کردیں گے”۔ صدارتی انتخابات میں امریکی ریپبلکن امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ نے نیوکلیئر معاہدے کو ’’آفت رساں‘‘قرار دیا تھا۔جاریہ سال مارچ میں ٹرمپ نے اعلان کیا تھا کہ منتخب ہونے کی صورت میں ان کی خارجہ پالیسی کی اولین ترجیحات نیوکلیئر معاہدے کی منسوخی اور ایران کی “دہشت گردی” کے عالمی نیٹ ورک کا خاتمہ ہوں گی۔گزشتہ برس جولائی میں ایران نے 5+1 گروپ (امریکہ، روس، چین، فرانس، برطانیہ اور جرمنی) کے ساتھ نیوکلیئر معاہدے پر دستخط کیے تھے۔جنوری سے نافذ العمل معاہدے کے تحت ایران اپنے نیوکلیئر پروگرام میں کمی لائے گا اور اس کے مقابل اْس پر عائد متعدد بین الاقوامی پابندیاں اٹھا لی جائیں گی۔

 

چین نے اروناچل پردیش میں دراندازی کا الزام مسترد کردیا
بیجنگ۔ 15 جون (سیاست ڈاٹ کام) چین نے آج ایک بار پھر اس بات کی تردید کی کہ وہ ہندوستان کی ریاست اروناچل پردیش میں دراندازی کر رہا ہے اور وضاحت کی کہ ہند۔ چین سرحدی حدود کا ہنوز کوئی تعین نہیں ہوا ہے اور پیوپل لبریشن آرمی کے جوان وہاں معمول کی فوجی مشقیں کرتے رہتے ہیں جو لائن آف اکچوئل کنٹرول کے چین کی جانب والا حصہ ہے۔ چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان لوکانگ نے ایک میڈیا بریفنگ کے دوران ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے یہ بات کہی۔ وہاں ان سے پوچھا گیا تھا کہ یہ رپورٹس کس حد تک صحیح ہیں کہ 250 چینی فوجی 9 جون کو مشرقی کامنگ ڈسٹرکٹ کے یانگسے علاقہ میں داخل ہوئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT