Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / خانگی دواخانوں میں آروگیہ شری کے تحت علاج سے انکار

خانگی دواخانوں میں آروگیہ شری کے تحت علاج سے انکار

حکومت سے تین سو کروڑ روپئے کے بقایہ جات ادا کرنے کا مطالبہ
حیدرآباد ۔ 10 ۔ اگست : ( سیاست نیوز) : تلنگانہ میں پرائیوٹ ہاسپٹلس اور ریاستی نظم و نسق کے مابین آروگیہ شری ادائیگیوں کے مسئلہ پر تعطل برقرار ہے حالانکہ بات چیت کے دوران ادائیگیوں سے حکومت نے اتفاق کیا تھا اور دوسرے فوائد دینے سے بھی اتفاق کیا گیا تھا ۔ ریاستی حکومت خانگی دواخانوں کو تین سو کروڑ روپئے ادا شدنی ہے ادائیگی میں تاخیر کی وجہ سے 160 خانگی دواخانے کے انتظامیہ فکر مند ہیں اس مرتبہ خانگی دواخانوں نے کسی ہڑتال کی دھمکی نہیں دی ہے ۔ بلکہ پرائیوٹ ہاسپٹلس نے آروگیہ شری کے تحت مریضوں کا علاج معالجہ روک دیا ہے ۔ خانگی دواخانوں نے حکومت سے چار سو کروڑ روپئے کا مطالبہ کرتے ہوئے جولائی کے پہلے ہفتہ میں ہڑتال کی تھی ۔ حکومت نے فوری طور پر ایک سو کروڑ روپئے جاری کرنے اور مسائل کی یکسوئی کا وعدہ کیا تھا ۔ حکومت نے جولائی میں 38 کروڑ روپئے جاری کیے اور اگست میں ایک سو کروڑ روپئے جاری کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ یہ رقم ہنوز جاری نہیں کی گئی ۔ حکومت اور خانگی دواخانوں کے نمائندوں کی کمیٹی نے صرف ایک مرتبہ اپنی میٹنگ منعقد کی جس میں مسائل کا جائزہ لیا گیا بعد میں کوئی میٹنگ منعقد نہیں ہوئی ۔ خانگی ہاسپٹلس اخراجات میں اضافہ کے پیش نظر پیاکیج پر نظر ثانی کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں ۔۔

TOPPOPULARRECENT