Sunday , April 30 2017
Home / شہر کی خبریں / خانگی ٹی وی چیانل کے پروگرام ’’ فتح کا فتویٰ‘‘ پر فوری روک لگائی جائے

خانگی ٹی وی چیانل کے پروگرام ’’ فتح کا فتویٰ‘‘ پر فوری روک لگائی جائے

دین اسلام میں انتشار کے منافق ’’ تارک فتح ‘‘ کو فوراً ہندوستان سے باہر کیا جائے ، مرکزی رحمت عالم کمیٹی کا مطالبہ

حیدرآباد /8 فروری ( راست ) قرآن پاک ساری انسانیت کیلئے روشن ہدایت ہے جس کا ذکر خود اللہ رب العزت نے قرآن پاک میں فرمادیا ۔ نیز اللہ رب العزت نے فرمایاکہ تا قیام قیامت اس میں کوئی تبدیلی کی گنجائش نہیں ۔ نہ اس کی حقانیت کا انکار کیا جاسکتا ہے اور نہ ہی اس میں کسی بھی انسان کا عمل دخل ہوسکتا ہے ۔ اسی طرح نبی مکرم ﷺ کی احادیث شریفہ میں بھی کسی بھی قسم کی تبدیلی اور غلط بیانی پر اس کے متعلق کئی وعیدیں آچکی ہیں ۔ گذشتہ چند ہفتوں سے ’’زی نیوز ‘‘ نامی چیانل پر ایک منافق اسلام ’’ تارک فتح ‘‘ کا ایک پروگرام ’’ فتح کا فتویٰ ‘‘ نامی نشر ہو رہا ہے جس میں یہ منافق دین متین کی تعلیمات کا انکار کر رہا ہے ۔ نعوذباللہ قرآن و حدیث ، نبی مکرم ﷺ کی شان اقدس صحابہ کرام رضون اللہ تعالی علیہم اجمعین کی شان میں مسلسل گستاخیاں کرتے نظر آرہا ہے ۔ یہ بدنام زمانہ منافق ، اسلام کے متعلق منفی خبریں ، اسلامی اصولوں اور شرعی مسائل پر نکتہ چینی کرتا دکھائی دے رہا ہے ۔ یہ منافق مخالف اسلام ذہنیت رکھنے والا شیطان ہے ۔ جس کا مقصد دین اسلام کے متعلق مسلمانوں میں انتشار و اختلاف پیدا کرنا ہے ۔ نیز دیگر ابنائے وطن میں اسلام کے متعلق غلط تاثرات پیش کرکے ملک ہند میں فتنہ و فساد کو ہوا دینے کی مذموم کوشش کر رہا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار کل ہند مرکزی رحمت عالم کمیٹی کے زیر اہتمام ہنگامی اجلاس منعقدہ 7 فروری منگل بمقام قادریہ اسلامک سنٹر دبیرپورہ سے ڈاکٹر سید معزالدین شرفی نے کیا ۔ مولانا نے اپنے خطاب کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ موجودہ نسل چونکہ اسلامی تعلیمات سے مکمل طور پر آگاہ نہیں ۔ اس لئے وہ اس قسم کے فتنوں سے متاثر ہوسکتے ہیں اور مخالف اسلام تعلیمات پر عمل کرکے اپنی دنیا و آخرت تباہ کرسکتے ہیں ۔ لہذا کل ہند مرکزی رحمت عالم کمیٹی کے توسط سے حکومت ہند سے مطالبہ کیا جاتا ہے کہ وہ فوراً اس پروگرام ’’ فتح کا فتویٰ ‘‘ پر روک لگائے ۔ چونکہ تارک فتح پاکستانی نژاد ہے اور کئی بار جیل جاچکا ہے اور کینڈا کی شہریت رکھتا ہے ۔ پاکستان نے اسے ملک بدر کردیا ہے ۔ یہ مخالف اسلام ذہنیت کے تحت ہندوستان کی ہمہ جہتی تہذیب میں انتشار پیدا کر رہا ہے ۔ ڈاکٹر محمد اقبال احمد رضوی نے کہا کہ دین اسلام کی تعلیمات کو بیان کرنے کیلئے کسی نیوز چیانل کی ضرورت نہیں اور جس طرح زی نیوز نے اس ملک بدر بدنام زمانہ کو سستی شہرت اور چیانل کی ٹی آر پی بڑھانے اور ہندوستان کی قومی یکجہتی کو متاثر کرنے کی مذموم کوشش کی جارہی ہے ۔ اس پر فوری روک لگائی جائے ۔ ڈاکٹر محمد عبدالنعیم قادری نے کہا کہ نبی مکرم ﷺ نے اپنے آخری خطبہ حجتہ الوداع میں فرمادیا کہ آج دین مکمل طور پر پہونچ چکا ہے ۔ اب اس میں کسی بھی قسم کی مداخلت کی گنجائش نہیں ۔ اللہ رب العزت کے احکامات کی خلاف ورزی کھلے عام کفر ہے جو شخص اسلام مخالف ذہنیت رکھتا ہو وہ منافق اسلام ہے حدیث شریف میں اس بات کا ذکر ہے کہ منافق کو معافی نہیں ہے ۔ جس نے قرآن و حدیث کا انکار کیا ۔ نبی مکرم ﷺ صحابہ کرام اور اولیاء کرام کی شان میں گستاخیاں کی بھلا وہ انتشار کے علاوہ کیا کرسکتا ہے ۔ محمد شاہد اقبال قادری ( صدر مرکزی رحمت عالم کمیٹی ) نے کہا کہ جس طرح پہلے زمانے میں فتنے پیدا ہوتے رہے ہیں ۔ اس طرح یہ بھی ایک فتنہ ہے جو مسلمانوں کے ذہنوں میں انتشار کو ہوادے رہا ہے ۔ اس منافق اسلام ’’ تارک فتح ‘‘ کو جس طرح خود اس کے ملک نے ملک بدر کردیا ہے ۔ یہ منافق ہندوستانی مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہونچا رہا ہے جو نہ تو کسی اسلامی یونیورسٹی سے فارغ ہے اور نہ کسی قسم کی علمی قابلیت رکھتا ہے ۔ اسے ایک نیوز چیانل پر اسلام کے متعلق من گھڑت اور غلط بیانی کرنے کا حق کس نے دیا ۔ لہذا حکومت ہند فوری طور پر اس پروگرام پر روک لگائے تاکہ ہمارے ملک کی قومی یکجہتی متاثر نہ ہو ۔ اس اجلاس میں اراکین کی کثیر تعداد موجود تھی ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT