Tuesday , September 26 2017
Home / شہر کی خبریں / خانگی یونیورسٹیز کے قیام کو منظوری ، کیش لیس معیشت کی تشکیل کا فیصلہ

خانگی یونیورسٹیز کے قیام کو منظوری ، کیش لیس معیشت کی تشکیل کا فیصلہ

ای پیمنٹ کیلئے عوام کو راغب کرنے وزراء کو چیف منسٹر کا مشورہ ، ریاستی کابینہ کا اجلاس
حیدرآباد۔10 ڈسمبر (سیاست نیوز) تلنگانہ کابینہ کا اجلاس چیف منسٹر کے چندر شیکھر رائو کی صدارت میں منعقد ہوا جس میں ریاست میں نئی خانگی یونیورسٹیز کے قیام، پراجیکٹس کیلئے اراضیوں کے وصولی کے سلسلہ میں نئی قانون سازی، کیاش لیس اکانمی کی تشکیل کے اقدامات اور آر ٹی سی میں نئے سواپنگ مشینوں کو متعارف کرنے جیسے فیصلے کئے گئے۔ 16 ڈسمبر سے اسمبلی و کونسل اجلاس کے پیش نظر کابینہ کے اجلاس کو اہمیت حاصل ہے۔ اجلاس میں اسمبلی اور کونسل میں حکومت کی حکمت عملی اور سرکاری بلس کو قطعیت دی گئی۔ اسمبلی اجلاس کے اعلامیہ کے اجرائی کے سبب کابینہ کے اجلاس کی بریفنگ نہیں دی گئی تاہم ذرائع نے بتایا کہ اجلاس میں سرمائی سیشن کی حکمت عملی کے علاوہ کئی اہم فیصلے کئے گئے۔ آبپاشی اور دیگر پراجیکٹس کی تعمیر کیلئے اراضی کے حصول میں دشواریوں اور کسانوں کی ناراضگی کے پیش نظر قانون میں ترمیم کا فیصلہ کیا گیا ۔ اسمبلی میں نیا بل پیش کیا جائے گا۔ بل پر اجلاس میں مباحث ہوئے اور اسے منظوری دی گئی۔ کابینہ نے دلتوں اور گریجن طبقہ کیلئے علیحدہ  سب پلان کی تیاری کیلئے فینانس کے حکام کو ہدایت دی ہے۔ کرشنا ٹربیونل کے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا کیوں کہ دریائے کرشنا کے پانی کی تقسیم پر ٹربیونل نے جو فیصلہ کیا ہے اس سے تلنگانہ کے مفادات متاثر ہورہے ہیں۔ کابینہ نے ریاست میں خانگی یونیورسٹیز کے قیام کی تجویز کو منظوری دی ۔ اس سلسلہ میں رہنمایانہ خطوط مدون کرنے ڈپٹی چیف منسٹر اور وزیر تعلیم کڈیم سری ہری کی قیادت میں کابینی سب کمیٹی تشکیل دی گئی جسکے ارکان میں کے ٹی راما رائو، پوچارم سرینواس ریڈی، جگدیش ریڈی، جوگو رامنا اور ٹی سرینواس یادو شامل ہیں۔ مشیر کی حیثیت سے سابق چیف سکریٹری ڈاکٹر راجیو شرما کو مقرر کیا گیا۔ کابینہ میں تلنگانہ میں نقدی لین دین کے بغیر ٹی ایس ویلٹ کی تیاری کے سلسلہ میں وزیر آئی ٹی کے ٹی راما رائو کی قیادت میں سب کمیٹی کی تشکیل کا فیصلہ کیا ہے۔ کمیٹی میں وزراء ای راجندر، جگدیش ریڈی، مہیندر ریڈی اور جوپلی کرشنا رائو شامل ہونگے۔ کابینہ نے تلنگانہ میں کیاش لیس اکانمی کی سمت پیش رفت پر اطمینان کا اظہار کیا ۔ کابینہ میں تمام محکمہ جات کو ہدایت دی ہے کہ اس سلسلہ میں مستعدی کا مظاہرہ کریں۔ حکومت کی جانب سے کوئی بھی ادائیگی اور اسے حاصل ہونے والی رقم سے متعلق تمام معاملات آن لائین انجام دینے کو ہدایت دی گئی۔ کابینہ نے فیصلہ کیا کہ بس ٹکٹ آن لائین خریدی کے اقدامات کئے جائیں اور آر ٹی سی کو نقدی لین دین سے پاک بنایا جائے۔ چیف منسٹر نے وزراء کو مشورہ دیا کہ وہ عوام کو راغب کریں کہ وہ نقدی لین دین کے بجائے ای پیمنٹ کے استعمال کو ترجیح دیں۔ انہوں نے کہا کہ تمام سرکاری معاملتیں نقدی کے بغیر ہونی چاہئے۔ کابینہ نے ایسے محکمہ جات جن پر کام کا کم بوجھ ہے وہاں کے ملازمین کو زائد سرکاری کام کاج والے محکمہ جات میں تبادلہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ کابینہ نے وینکٹیشور ویٹرنری یونیورسٹی کا نام پی وی نرسمہا رائو یونیورسٹی رکھنے اسمبلی میں بل پیش کرنے کا فیصلہ کیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ اپوزیشن کے الزامات کا مقابلہ کرنے وزراء کو اپنے محکمہ جات پر عبور حاصل کرتے ہوئے پہنچنے کی ہدایت دی گئی۔  کابینہ نے دونوں ایوانوں میں وزراء اور ارکان کی حاضری پر ہدایت جاری کی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT