Saturday , October 21 2017
Home / شہر کی خبریں / خانگی یونیورسٹیز کے قیام کی اجازت بدبختانہ

خانگی یونیورسٹیز کے قیام کی اجازت بدبختانہ

کمزور طبقات کے طلبہ اعلیٰ تعلیم سے محروم ہوں گے
حیدرآباد ۔ 26 ڈسمبر (سیاست نیوز) تلنگانہ یونیورسٹی ٹیچرس اسوسی ایشن نے کہا کہ تلنگانہ میں پرائیویٹ یونیورسٹیز کے قیام کی اجازت دے کر ریاستی حکومت نے فاش غلطی کی ہے۔ اسوسی ایشن کے صدر پروین مامڈالہ نے کہا کہ خانگی یونیورسٹیز اعلیٰ تعلیم میں مراعات سے محروم طبقات کے مواقع چھین لیں گی اور معیاری اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے کیلئے کمزور طبقات کے مواقع محدود ہوجائیں گے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ حکومت اس طرح سرکاری تعلیمی ادارے بتدریج بند کرنے کی راہ ہموار کررہی ہے تاکہ پرائیویٹ یونیورسٹیز کی مدد ہوسکے۔ انہوں نے کہا کہ انٹرمیڈیٹ اور انڈر گریجویشن بالکلیہ کمرشیل ہوکر رہ گئے ہیں جس کی وجہ سے سرکاری کالجس بند ہورہے ہیں۔ اگر پرائیویٹ یونیورسٹیز قائم ہوں گی تو سرکاری یونیورسٹیز کا بھی وہی حشر ہوگا جو سرکاری کالجس کا ہورہا ہے۔

TOPPOPULARRECENT