Monday , October 23 2017
Home / شہر کی خبریں / خصوصی موقف حاصل کرنے مرکز پر مزید دباؤ ڈالا جائیگا

خصوصی موقف حاصل کرنے مرکز پر مزید دباؤ ڈالا جائیگا

چیف منسٹر اے پی چندرا بابو نائیڈو کا اعلان ۔ مرکز سے کسی بھی سمجھوتہ کی تردید
وجیا نگر م5 مئی ( پی ٹی آئی ) چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے آج کہا کہ ان کی جانب سے مرکزی حکومت پر مزید دباؤ ڈالا جائیگا تاکہ ریاست کو خصوصی زمرہ کا موقف حاصل ہوجائے ۔ نائیڈو نے یہاں آج دو پہر ایک جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کو اپنی ریاست کیلئے خصوصی زمرہ کا موقف حاصل کرنا ہے ۔ ساتھ ہی مرکزی حکومت کو چاہئے کہ وہ ریاست کو تمام ضروری معاشی امداد فراہم کرے کیونکہ ریاست کو کئی مسائل کا سامنا ہے جو متحدہ ریاست کی غیر سائینٹفک تقسیم کی وجہ سے پیش آ رہے ہیں۔ چیف منسٹر نے یہ بیان ایسے وقت میں دیا جب کچھ مرکزی وزرا کے یہ بیانات سامنے آئے ہیں جن میں انہوں نے آندھرا پردیش کو تقسیم کے بعد خصوصی زمرہ کا موقف دینے کا امکان مسترد کردیا گیا ہے ۔ نائیڈو نے کہا کہ ہم نے مشکل حالات میںبی جے پی کے ساتھ اتحاد کیا ۔ ایک نئی ریاست قائم ہوئی جس میں کئی مسائل ہیں۔ ہم کو پیسے کی ضرورت ہے اور مرکز سے کئی پراجیکٹس کی منظوری درکار ہے ۔ ایسے میں ہم نے بی جے پی سے اتحاد کیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے مرکز سے خصوصی زمرہ کے موقف پر کبھی سمجھوتہ نہیں کیا ۔ ہم مزید دباؤ ڈالتے ہوئے اپنا مقصد حاصل کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ جب تک آئندہ دس سال تک ریاست کا ہر شہری مسلسل جدوجہد نہیں کریگا اس وقت تک ریاست مسائل سے باہر نہیں آئیگی ۔ چیف منسٹر نے واضح کیا کہ آندھرا پردیش کو دریاؤں کے پانی کی تقسیم کے مسئلہ پر اپنی پڑوسی ریاستوں سے بھی مسائل درپیش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دریاؤں کے پانی کی تقسیم کے مسئلہ پر آندھرا پردیش کیلئے تلنگانہ اور اوڈیشہ مسائل پیدا کر رہے ہیں۔ تلنگانہ کی جانب سے تنظیم جدید اے پی قانون کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کرشنا اور گوداوری دریاؤں پر پراجیکٹس تعمیر کئے جا رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں ان تمام مسائل کا قابل قبول حل دریافت کرنا ہے ۔ اوڈیشہ کی جانب سے بھی ہمارے پراجیکٹس کی مخالفت کی جا رہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT