Tuesday , May 30 2017
Home / جرائم و حادثات / خواتین پر مظالم کی روک تھام کے موثر اقدامات

خواتین پر مظالم کی روک تھام کے موثر اقدامات

رچہ کنڈہ میں انسپکٹرس و پولیس جوانوں کی تربیت ، کمشنر مہیش مرلی بھگوت کا خطاب
حیدرآباد /15 فروری ( سیاست نیوز ) پولیس کی وردی میں پولیس اگر ڈاکٹروں جیسی خدمات انجام دیں تو سماج کی بھلائی اور سماج سدھاکر کا بہترین کام ہوگا ۔ یہ بات کمشنر پولیس رچہ کنڈہ مسٹر مہیش مرلی دھر بھگوت نے کلی ۔ انہوں نے آج یہاں تربیتی سب انسپکٹرس اور ملازمین پولیس کے ایک تربیتی اجلاس کو مخاطب کیا ۔ ریاستی حکومت کی جانب سے احکامات کے بعد اقدامات کے تحت رچہ کنڈہ پولیس نے پہل کا آغاز کردیا ہے ۔ تاکہ خواتین پر ہورہے مظالم اور اس کی روک تھام کے موثر اقدامات کئے جاسکیں ۔ اس کے علاوہ گرہست اور برسر کار خواتین لڑکیوں اور بچوں پر ہو رہے مظالم کو بھی روکا جاسکے ۔ اس اجلاس میں جس کا آغاز کرنے کے بعد کمشنر پولیس ملازمین پولیس سے مخاطب تھے ۔ شی ٹیم اور ایک رضاکار تنظیم بھومیکا آرگنائزیشن کی شراکت حاصل ہے ۔ کمشنر پولیس رچہ کنڈہ مسٹر مہیش مرلی دھر بھگوت نے کہا کہ متاثرہ خواتین کے مسائل کی سماعت میں صبر و تحمل کا مظاہرہ کرنا چاہئے اور ان مظلوم خواتین کے ساتھ ہمدردانہ رویہ اختیار کرتے ہوئے انہیں دلاسہ دینا ہوگا اور ایسے اقدامات جو ایک مریض کے حق میں ڈاکٹرس کے ہوتے ہیں کئے جانے چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ جہیز و ہراسانی ، گھریلو تشدد اور کام کی جگہ خواتین پر مظالم کو روکنے میں کسی حد تک کامیابی حاصل ہو رہی ہے ۔ لیکن ایسے بھی واقعات پائے جاتے ہیں ۔ جو پولیس تک نہیں پہونچ پارہے ہیں اور پولیس کو چاہئے کہ وہ اپنے اقدامات کے ذریعہ ان متاثرین میں اعتماد کو بحال کرے ۔ انہوں نے بہترین انداز میں گھریلو مسائل کے واقعات اور میاں بیوی کے مسائل و جھگڑوں کی کونسلنگ کا مشورہ دیا ۔ اس اجلاس میں 100 سے زائد سب انسپکٹر ملازمین پولیس موجود تھے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT