Saturday , March 25 2017
Home / مذہبی صفحہ / خوب ہے ترکیب میں قوم رسول ہاشمی

خوب ہے ترکیب میں قوم رسول ہاشمی

مولانا حبیب عبدالرحمن بن حامد الحامد

ایک بار خلیفۂ دوم امیرالمؤمنین حضرت عمر بن خطابؓ نے سعیدؓ بن عامر کو بلاکر کہا میں تمہیں حمص کا گورنر بتاتا ہوں تم وہاں جاؤ ۔ حضرت سعیدؓ بن عامر نے کہا : ’’اے جانشین رسول ؐ مجھے اس کام سے دور رکھئے ‘‘۔ لیکن حضرت عمر فاروقؓ نے کہا : ’’مجھے تم لوگ ذمہ داری دیتے ہو اور میں ذمہ داریاں تم لوگوں کو بانٹتا ہوں تو پہلو تہی کرتے ہو۔ تم کو حمص جانا پڑے گا ‘‘ ۔
چاروناچار حضرت سعیدؓ بن عامر حمص چلے گئے ۔ یہ وہ اصحاب ِ رسول ہیں جن کو دنیا داری چھوکر بھی نہیں گئی ۔ بڑی سادگی کے ساتھ اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں۔ حضرت عمر فاروقؓ نے ایک مرتبہ حمص کے لوگوں سے کہا کہ تمہارے پاس جو لوگ ضرورت مند ہوں ان کی ایک فہرست میرے پاس بھیجو تاکہ میں بیت المال سے اُن کی کچھ امداد کرسکوں ۔
اہل حمص نے جو فہرست روانہ کی اُس میں سب سے پہلا نام سعیدؓ بن عامر کا لکھا ہوا تھا ۔ حضرت عمرؓ نے سوال کیا یہ سعیدؓ بن عامر کون ہیں ؟
تو اہل حمص نے کہا کہ آپ نے جن کو گورنر بنایا ہے ۔
حضرت عمر فاروقؓ نے کہا دربار خلافت سے ان کو وظیفہ مقرر ہے ۔ انھوں نے کہا ، یہ سب بانٹ دیتے ہیں ، اپنے لئے کچھ نہیں رکھتے ۔ حضرت عمر فاروقؓ رونے لگے ۔ اس کے بعد آپ نے اپنے قاصد کے ہاتھوں ایک ہزار دینار حضرت سعیدؓ بن عامر کے ذاتی خرچ کیلئے روانہ کئے ۔ جب قاصد حضرت سعیدؓ بن عامر کے سامنے وہ دینار پیش کیا تو آپؓ کی زبان سے انا للہ نکلا ۔ اندر سے بیوی کی آواز آئی کیا خلیفۃ المسلمین کو کچھ ہوگیا ہے ؟ یا کوئی قیامت کی نشانی دکھائی دی ہے ؟
حضرت سعیدؓ بن عامر نے کہا : ’’نہیں ! بلکہ اس سے بڑی بات ہوگئی ‘‘۔ پوچھا وہ کیا ؟
کہا دولت ہمارے گھر آگئی ہے ۔
وفا شعار بیوی نے کہا ، اتنے پریشان ہونے کی ضرورت نہیں ۔ صبح ان کو مجاہدین اسلام میں تقسیم کردیجئے ۔ آپ نے اسی طرح عمل کیا ۔
حضرت عمر فاروقؓ کو جب اس کا علم ہوا تو پھر اشک بار ہوگئے ۔ حضرت عمر فاروقؓ فرمایا کرتے ۔ اگر مجھے ابوعبیدہؓ بن جراح، حذیفہؓ بن یمان ، سلمانؓ فارسی ، سعیدؓ بن عامر جیسے لوگ مل جائیں تو اپنی ذمہ داریاں ان لوگوں کو سونپ دوں ۔ اﷲ تعالیٰ ہم کو اپنے اسلاف کے نقش قدم پر چلائے ۔ آمین
٭  حضرت عقیل ؓ بن ابی طالب حضرت معاویہؓ کے پاس بیٹھے ہوئے ہیں ، دوران گفتگو حضرت معاویہ بن ابی سفیانؓنے آپ کا تعارف کراتے ہوئے کہا : ’’ان سے ملو یہ عقیل بن ابی طالب ؓ ہیں، اور ان کا چچا ابولہب ہے ‘‘۔
حضرت عقیل بن ابی طالب رضی اﷲ تعالیٰ عنہ نے فوراً کہا :   ’’ان سے ملو یہ معاویہ بن ابی سفیانؓ ہیں ، ان کی پھوپھی ابولہب کی بیوی ہے ‘‘۔
اس برجستہ جواب سے حضرت امیر معاویہؓ خاموش ہوگئے ۔
خاندان ہاشمی کے لوگوں کا یہ خاص وصف ہے کہ وہ برجستہ اور فوری ایسا جواب دیتے کہ سامنے والا شرمند ہوجائے اور اس کے سامنے کوئی جواب نہ ملے ۔ حضرت عقیلؓ ، مولائے کائنات حضرت علی ابن ابی طالب کرم اللہ وجہہ کے بڑے بھائی ہیں ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT