Thursday , September 21 2017
Home / Top Stories / خود ساختہ سادھو گرمیت رام رحیم سنگھ عصمت ریزی کے جرم کا مرتکب

خود ساختہ سادھو گرمیت رام رحیم سنگھ عصمت ریزی کے جرم کا مرتکب

سزاء کا اعلان /28 اگست کو ،ڈیرہ سچا سودا کے حامیوں کا دہلی، ہریانہ، پنجاب اور راجستھان میں دیوانہ وار تشدد، 31 ہلاک، 300زخمی

پنچکولہ 25 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام) خود ساختہ سادھو گرمیت رام رحیم سنگھ کو عصمت ریزی کے ایک مقدمہ میں عدالت کی طرف سے جرم کا مرتکب قرار دیئے جانے پر برہم ان کے ہزاروں بھکت دیوانہ وار تشدد پر ٹوٹ پڑے اور متعدد مقامات پر سنگباری کے علاوہ درجنوں گاڑیوں اور چند ریلوے اسٹیشنوں کو نذر آتش کردیا۔ تشدد کے مختلف واقعات میں کم سے کم 31افراد ہلاک اور 300 زخمی ہوئے ہیں۔ ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ کو سی بی آئی کی ایک خصوصی عدالت کی طرف سے عصمت ریزی کے جرم کا مرتکب قرار دیئے جانے کی اطلاع کے فوری بعد ان کے ہزاروں حامیوں نے جن میں خواتین کی کثیر تعداد بھی شامل تھی، پولیس کی ناکہ بندی اور سکیورٹی حصار کو توڑ دیا اور دیوانہ وار تشدد پر اُترتے ہوئے وہاں موجود خانگی ٹیلی ویژن چیانل کے کم سے کم تین میڈیا ویانس کو نقصان پہنچایا۔ دو ویانس کو برہم ہجوم نے اُلٹ دیا۔ تشدد کا یہ سلسلہ ہریانہ اور پنجاب سے راجستھان تک پھیل گیا۔ پرتشدد مظاہرین کو منتشرین کرنے کے لئے پولیس نے ہوا میں فائرنگ کی۔ آنسو گیس شل برسائے گئے اور پانی کی طاقتور پچکاریوں کا استعمال کیا گیا۔ پنچکولہ سیول ہاسپٹل کے ایک ڈیوٹی ڈاکٹر نے اس دواخانہ میں کم سے کم پانچ افراد کی ہلاکت کی توثیق کی۔ سی این این نیوز 18 کے ایک رپورٹر نے کہاکہ متعدد ایمبولنس گاڑیوں کے ذریعہ درجنوں زخمیوں کو ہاسپٹل منتقل کیا جارہا ہے۔ کئی زخمی خون میں لت پت دیکھئے گئے۔ رپورٹر نے کہاکہ اس علاقہ میں ہر طرف گڑبڑ اور افراتفری دیکھی گئی۔ تاہم یہ واضح نہیں ہوسکا کہ یہ افراد پولیس کی کارروائی یا پھر ڈیرہ سچا سودا کے بھکتوں کے تشدد میں زخمی ہوئے ہیں۔ رپورٹر نے کہاکہ ’’زخمیوں کو لانے کا لامتناعی سلسلہ جاری ہیتصاویر میں کئی گاڑیوں کو جلتا ہوا دیکھا گیا اور قریب ہی سڑک پر ایک شخص سکتہ کی حالت میں پڑا دیکھا گیا۔ رپورٹر میں کہا گیا ہے کہ یہ شخص فوت ہوچکا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ڈیرہ سچا سودا کے اطراف تشدد میں ابتدائی اطلاعات کے مطابق 8 افرادہلاک اور دیگر 300سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔ انڈیا ٹوڈے گروپ کے ٹی وی چیانل نے سرسہ میں واقع سچا سودا ہیڈکوارٹر کے قریب اپنے نامہ نگار اور کیمرہ مین پر ہجوم کے حملہ کی تصاویر دکھایا۔ کیمرے میں تشدد کے متعدد مناظر قید کرلئے گئے۔ پرتشدد ہجوم کو لاٹھیوں سے حملہ کے دوران گاڑیوں کے آئینے چکنا چور کرتے ہوئے دیکھا گیا۔ اس دوران ایک ویڈیو فٹیج بھی منظر عام پر آیا جس میں دکھایا گیا کہ ایک ویان کا آئینہ توڑا گیا جس میں سوار ایک شخص حالت خوف میں چیخ رہا تھا پھر اس شخص کا زخموں کے ساتھ خون آلود چہرہ دیکھا گیا۔ پنچکولہ میں کل رات سے ہی ہزاروں افراد سڑکوں پر جمع ہوگئے تھے اور آج عدالتی فیصلہ کے اعلان کے ساتھ ہی تشدد پر ٹوٹ پڑے۔ جنھیں منتشر کرنے کیلئے پولیس نے ہوائی فائرنگ کی اور آنسو گیس شل برسائے گئے۔ صورتحال پر قابو پانے کے لئے پولیس نے لاٹھی چارج بھی کی تھی۔ سی بی آئی کی خصوصی عدالت کے جج جگدیپ سنگھ نے ڈیرہ سچا سودا کے سربراہ 50 سالہ رام رحیم سنگھ کو عصمت ریزی کے جرم کا مرتکب قرار دیا۔ 28 اگسٹ کو سزا کا اعلان کیا جائے گا۔ ریاست پنجاب کی جانب سے فوج طلب کرلی گئی جبکہ 10 اضلاع میں کرفیو نافذ کردیا گیا ۔ پنجاب اینڈ ہریانہ ہائیکورٹ نے حکم جاری کرتے ہوئے کہا کہ تمام نقصانات بیرہ سے وصول کئے جائیں۔ (مزید خبریں صفحہ 6 پر)

 

TOPPOPULARRECENT