Saturday , August 19 2017
Home / Top Stories / دادری قتل واقعہ پر وزیراعظم کا تاخیر سے ردعمل ’معقول‘ نہیں

دادری قتل واقعہ پر وزیراعظم کا تاخیر سے ردعمل ’معقول‘ نہیں

بہار میں ’جنگل راج‘ کا ریمارک کرنے والوں کی گجرات کے لا اینڈ آرڈر پر نظر نہیں : نتیش کمار
نئی دہلی ؍ پٹنہ ، 10 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) چیف منسٹر بہار نتیش کمار نے آج وزیراعظم نریندر مودی کو ہدف تنقید بنایا کہ انھوں نے دادری واقعہ کے تناظر میں ’’معقول حد تک سخت‘‘ بیان نہیں دیا اور انھیں اس قتل پر فوری ردعمل ظاہر نہ کرنے پر بھی شدید نکتہ چینی کا نشانہ بنایا۔ جے ڈی (یو) لیڈر نے مودی کو اس بات پر بھی نشانہ بنایا کہ انھوں نے قتل کے واقعہ کی راست طور پر مذمت کرنے کے بجائے رواداری اور کثرت میں وحدت کے بارے میں صدرجمہوریہ کے پیام کو استعمال کیا۔ نتیش نے کہا کہ جمعرات کو مودی کا فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقرار رکھنے اور غربت کو ختم کرنے سے متعلق بیان عوام میں پائے جانے والے اندیشوں کو دور کرنے کیلئے ’’معقول‘‘ نہیں ہے۔ نتیش نے بی جے پی پر بھی الزام عائد کیا کہ وہ حقیقی مسائل سے توجہ ہٹانے کیلئے فرقہ واریت کا کھیل کھیل رہی ہے۔ چیف منسٹر بہار نے ’ٹائمز ناؤ‘ کو بتایا کہ ’’پی ایم کو فوری ردعمل ظاہر کرنا چاہئے تھا۔ اُن کا بیان معقول حد تک سخت نہیں ہے۔ طویل خاموشی کی بجائے انھیں (دادری واقعہ پر) فوری ردعمل ظاہر کرنا چاہئے تھا تاکہ اندیشے دور ہوجائیں اور عوام میں اعتماد بحال ہو۔‘‘ انھوں نے مزید کہا کہ وزیراعظم کا بیان راست ہونا چاہئے تھا کیونکہ مودی اس منتخب لیڈر ہیں۔ یہ بھی تعجب خیز ہے کہ کیوں انھوں نے یہ ریمارک مرکزی سطح کی بجائے بہار میں کیا۔ چیف منسٹر بہار نے وزیراعظم مودی کو بار بار ’’جنگل راج‘‘ کا طنز کرنے پر بھی چوٹ کی اور کہا کہ گجرات میں مجالس مقامی کے انتخابات لا اینڈ آرڈر مسئلہ پر ملتوی کئے گئے ہیں۔ ’’مودی جی جنھوں نے گجرات پر 12 سال حکمرانی کی انھیں جواب دینا چاہئے کہ کیوں مجالس مقامی چناؤ نظم و ضبط کی خراب صورتحال کے سبب مستقبل کی تاریخ کیلئے ملتوی کردیئے گئے ہیں،‘‘ نتیش نے میڈیا یہ بات کہی اور وزیراعظم کو سخت جواب دیا جو بہار میں اپنی سلسلہ وار ریالیوں کے دوران سکیولر اتحاد پر ’’جنگل راج‘‘ کا طنز کرتے رہے۔ نتیش نے لا اینڈ آرڈر اور جرائم سے متعلق وزیراعظم کے ریمارک کو بھی مسترد کردیا اور کہا کہ نیشنل کرائم ریکارڈ بیورو کے مطابق بی جے پی حکمرانی والی ریاستوں مدھیہ پردیش، راجستھان ، گجرات اور ہریانہ میں زیادہ جرائم پیش آئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT