Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / دادری واقعہ پر فوج کے افراد خاندان میں تشویش کی لہر

دادری واقعہ پر فوج کے افراد خاندان میں تشویش کی لہر

متوفی محمد اخلاق کے فرزند سے سابق فوجیوں کا اظہار ہمدردی

نئی دہلی 17 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) سابق فوجیوں نے دیرینہ مطالبہ ایک رتبہ ۔ ایک وظیفہ پر احتجاج کے دوران آج دادری واقعہ کو بھی اٹھایا ہے اور یہ مطالبہ کیا ہے کہ برسر خدمت فوجیوں اور ان کے افراد خاندان کی شکایات کی یکسوئی کیلئے ایک میکانزم وضع کیا جائے۔ جبکہ اس واقعہ میں ایرفورس کے ایک ملازم کے والد کو بیف کے مسئلہ پر موت کے گھاٹ اُتار دیا گیا تھا۔ سابق فوجیوں کے ایک وفد نے آرمی ریسرچ اینڈ ریفرل انسٹی ٹیوٹ میں زیرعلاج دانش سے ملاقات کی جوکہ انڈین ایر فورس کے کارپورل سرتاج کے بھائی ہیں۔ بیف کے استعمال کی افواہ پر ایک ہجوم نے دانش کو بھی ان کے والد محمد اخلاق کے ساتھ حملہ کا نشانہ بنایا تھا۔ اس واقعہ کے بعد انڈین ایر فورس نے سرتاج کے خاندان کو دہلی کے سبروتو پارک میں رہائش گاہ فراہم کی ہے۔ انڈین ایکس سرویس مین موؤمنٹ کے صدرنشین میجر (ریٹائرڈ) ستبیر سنگھ نے یہاں ایک پریس کانفرنس میں کہاکہ یہ انتہائی دردناک واقعہ ہے کہ دادری میں ہمارے ایک سپاہی کے والد کو ہلاک اور ان کے بھائی کو زخمی کردیا گیا۔

انھوں نے بتایا کہ اگرچیکہ ہمارا وفد زخمی دانش سے ملاقات کیلئے آرمی ہاسپٹل پہنچا لیکن وہ انٹنسیو کیر یونٹ میں رہنے کی وجہ سے ملاقات نہیں کرسکے۔ انھوں نے کہاکہ برسر خدمت اور وظیفہ یاب فوجیوں کے افراد خاندان پر حملوں کے واقعات تشویشناک ہوگئے ہیں جس کے باعث ان کی سلامتی غیر یقینی ہوگئی ہے۔ یونائیٹیڈ فرنٹ آف ایکس سرویس مین موؤمنٹ کے میڈیا اڈوائزر کرنل (ریٹائرڈ) انیل کول نے کہاکہ دادری کا واقعہ منظر عام پر آنے سے معلوم ہوا ہے جبکہ برسر خدمت اور موظف سپاہیوں کے افراد خاندان پر حملوں کے کئی واقعات پیش آچکے ہیں جس کے باعث وظیفہ پر سبکدوش دور افتادہ مقامات پر ملازمت کرنے والے فوجی اپنے افراد خاندان کی سلامتی اور حفاظت کیلئے فکرمند ہوگئے ہیں۔ انھوں نے مسلح افواج کی شکایات اور مسائل کی یکسوئی کیلئے ویٹرنس کمیشن اور آرمڈ فورسیس کوننٹ (عہد نامہ) پر قانون سازی کا مطالبہ کیا جیسا کہ بی جے پی کے اپنے انتخابی منشور اور صدرجمہوریہ نے پارلیمنٹ میں وعدہ کیا تھا۔

دریں اثناء این ڈی اے کی حلیف جماعت شرومنی اکالی دل نے آج دادری واقعہ کو ملک کیلئے شرمناک قرار دیا اور کہاکہ اس واقعہ کے بعد وزیراعظم نریندر مودی کے امیج کو سب سے زیادہ نقصان پہنچا ہے۔ پارٹی کے رکن پارلیمنٹ نریش گجرال نے کہاکہ دادری کا واقعہ ملک اور قوم کے لئے انتہائی شرمناک ہے جس کی سخت الفاظ میں مذمت کی جانی چاہئے۔ انھوں نے کہاکہ دادری (اترپردیش) میں ایک شخص کو موت کے گھاٹ اُتار دینے کے واقعہ سے نہ صرف این ڈی اے بلکہ بی جے پی اور وزیراعظم مودی کو اس قدر نقصان پہنچا ہے جوکہ اب تک کسی نے نہیں پہنچایا تھا۔ مسٹر نریش اگروال نے کہاکہ اس واقعہ سے نہ صرف وزیراعظم مودی نے لب کشائی سے گریز کیا بلکہ کسی کے خلاف بھی کارروائی نہیں کی گئی۔ جبکہ وقت کا تقاضہ ہے کہ خاطیوں کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے سنگھ پریوار کو یہ سخت پیام دیا جائے کہ اس طرح کی شرانگیزی کو برداشت نہیں کیا جائے گا۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT