Tuesday , September 26 2017
Home / Top Stories / دادری کے بے رحمانہ قتل کے ملزم کی نعش پر قومی پرچم اڑانے کی سوسیشل میڈیا پر مذمت۔ کئے افراد اس عمل کی مخالفت میں ٹوئٹ کیا

دادری کے بے رحمانہ قتل کے ملزم کی نعش پر قومی پرچم اڑانے کی سوسیشل میڈیا پر مذمت۔ کئے افراد اس عمل کی مخالفت میں ٹوئٹ کیا

دادری میں پیش ائے بے رحمانہ قتل کے ملزم22سالہ راوین کی نعش کے آخری رسومات انجام دینے سے انکار کے بعد اترپردیش کابساڈا گاؤں پھر ایک مرتبہ کشیدگی کا ماحول پیدا ہوگیا۔

https://twitter.com/AnjaliMody1

https://twitter.com/kanikagahlaut

https://twitter.com/RanaAyyub

https://twitter.com/JairajSinghR

https://twitter.com/sanjayuvacha

رواین کی سانس لینے میں دشواری اور گردوں کے فیل ہوجانے کے سبب دہلی کے لوک نائیک جئے پرکاش اسپتال میں موت واقع ہوگئی تھی۔گاؤں کے لوگوں نے اس کوہندونظریات کا محافظ قراردیتے ہوئے شہیدکا درجہ دیا اور اس کی نعش کو قومی پرچم میں لپیٹ کر رکھا۔علاقہ میں اس وقت کشیدگی میں اضافہ ہوا جب رواین کی نعش بساڈا گاؤں پہنچی ۔

https://twitter.com/kkhushal9

مقامی افراد نے میڈیکل رپورٹ کو مسترد کرتے ہوئے انتظامیہ پر رواین کے قتل کا الزام عائد کیا۔علاقہ میں پولیس کی بھاری جمعیت کو بھی متعین کردیا گیاہے جبکہ مقامی عوام رواین کے افراد خاندان کو ایک کروڑ روپئے ایکس گریشیاء فراہم کرنے کا حکومت سے مطالبہ کررہے ہیں۔

https://twitter.com/threeinchfooll

بی جے پی رکن اسمبلی سنجے رانا اور دادری قتل کیس کے ایک او رملزم کے والد نے اخلاق کے بھائی جان محمد کو گائے ذبیحہ قانون کی خلاف ورزی کے مقدمہ میں گرفتار کرنے اور جیل انتظامیہ کے خلاف سخت کاروائی کا بھی ریاستی انتظامیہ سے مطالبہ کیا ۔

مطالبات کی تکمیل کے بعد ہی رواین کے آخری رسومات انجام کی بھی گاؤں والوں نے حکومت کو دھمکی دی ہے ۔

اس دورا ن حکومت اتر پردیش کی جانب سے رواین کی بیوی پوجا کو دس لاکھ روپئے ایکس گریشیاء فراہم کرنے کااعلان کیا گیا۔ اترپردیش پولیس کادعویٰ ہے کہ رواین تیز بخار میں مبتلاء تھا اور خدشہ ہے کہ رواین کی موت ڈینگو سے ہوئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT