Wednesday , September 20 2017
Home / ہندوستان / داعش ، اسلام اور مسلمانوں کے سب سے بڑے دشمن

داعش ، اسلام اور مسلمانوں کے سب سے بڑے دشمن

مسلم ممالک کو ٹھوس حکمت عملی اپنانے کی ضروت : پروفیسر اختر الواسع
نئی دہلی ۔ 16 ۔ نومبر : ( فیکس ) : ماہر اسلامیات اور محکمہ لسانی اقلیات حکومت ہند کے کمشنر پروفیسر اختر الواسع نے ایک صحافتی بیان میں کہا ہے کہ فرانس کی راجدھانی پیرس میں بربریت ، بہیمیت اور درندگی کا جو ننگا ناچ سامنے آیا ہے اس نے ساری دنیا کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا ہے ۔ داعش نے جس طرح اس کی ذمہ داری قبول کی ہے وہ اور بھی زیادہ شرمناک اور قابل مذمت ہے ۔ انہوں نے کہا ہے کہ اسلام کا لبادہ اوڑھ کر اور مسلمان ناموں کے ساتھ وحشت اور دہشت کے یہ کاروباری اسلام اور مسلمانوں کے سب سے بڑے دشمن ہیں ۔ انسانی جان اور وقار کی پامالی اور بے حرمتی کا اسلام سب سے بڑا مخالف ہے اور داعش کا ہر عمل و فعل آج ساری دنیا کے سامنے اسلام اور مسلمانوں کی شرمساری کا سبب بن رہا ہے ۔ پروفیسر اختر الواسع کے مطابق مسلمان ناموں والے دہشت گرد ساری دنیا کا قافیہ تو تنگ نہیں کرپارہے ہیں لیکن دنیا بھر میں مسلمانوں کے قدموں تلے زمین کو ضرور تنگ کئے دے رہے ہیں ۔ چنانچہ اسلام اور مسلمان اپنی تاریخ کے ایک ایسے نازک دور سے گذر رہے ہیں جب نئے عہد کے خوارج مسلکی عناد و فساد کا سبب بھی بن رہے ہیں اور ساری دنیا میں مسلمانوں کو رسوا کررہے ہیں ۔ پروفیسر اخترالواسع نے کہا ہے کہ اگرچہ یہ امر باعث اطمینان ہے کہ ساری دنیا کے مسلم ممالک اور مسالک نے داعش سے برات کا اظہار کیا ہے ۔ ان کی کھل کر مذمت کی ہے لیکن ضرورت ہے کہ اس سے بھی زیادہ مضبوط اور ٹھوس اقدامات ان کی بیخ کنی کے لیے کیے جائیں ، اس لیے یہ ناگزیر ہے کہ جغرافیائی حد بندیوں ، سیاسی مصلحتوں اور مسلکی معتقدات سے اوپر اٹھ کر ایک متحدہ حکمت عملی وضع کی جائے ، ایسی موثر حکمت عملی جس سے ساری دنیا اور مسلمانوں کے حوالے سے ایک مثبت پیغام جاسکے ۔

TOPPOPULARRECENT