Thursday , August 17 2017
Home / دنیا / داعش ایک مملکت میں تبدیل، جرمن انٹلیجنس کا انتباہ

داعش ایک مملکت میں تبدیل، جرمن انٹلیجنس کا انتباہ

جہادی گروپ محض دہشت گرد تنظیم تک محدود نہیں،ہانس ماسن کا انکشاف
برلن ۔16 ۔ ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) جرمن داخلی انٹلیجنس کے سربراہ نے خبردار کیا ہے کہ اسلامک اسٹیٹ (داعش) بلا شبہ ایک مملکت جیسا وجود اختیار کرگیا ہے اور پیرس حملوں کا مقصد بھی یوروپ میں پناہ گزینوں کے بے پناہ داخلوں پر خوف و اندیشے پیدا کرنا تھا۔ ہانس جارج ماسن نے ایک انٹرویو میں کہا کہ ’’اب آئی ایس کو محض ایک دہشت گرد تنظیم کہنا مسائل میں مزید اضافہ کرنے کے مترادف ہے‘‘۔ انہوں نے کہا کہ یہ جہادی گروپ اب محض ایک دہشت گرد تنظیم تک محدود نہیں رہا بلکہ 1970 ء کی دہائی کے دہشت گرد گروپوں کے برخلاف کافی مضبوط ہوچکا ہے جس کا شام اور عراق کے کئی حصوں پر کنٹرول قائم ہوچکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ’’آئی اے ایس ایک مملکت جیسے وجود کا حامل ہے اور ہمارے خلاف جنگ چھیڑنا چاہتا ہے‘‘۔ ماسن نے نشاندہی کی کہ پیرس کے دو حملہ آوروں نے فرانس کو روانگی کیلئے یونان میں اپنے نام درج کرائے تھے۔ اس اقدام کے ذریعہ آئی ایس نے اپنی طاقت کا مظاہرہ کرنے کی کوشش کی ہے۔ وہ یہ دکھانا چاہتے تھے کہ وہ ایسا کرسکتے ہیں اور ہم پر اثرانداز بھی ہوسکتے ہیں۔ جہادیوں نے پناہ گزینوں کے داخلے سے متعلق یوروپی ملکوں کی پالیسی کو غلط ثابت کرنے کی کوشش کی ہے۔

TOPPOPULARRECENT