Tuesday , August 22 2017
Home / دنیا / داعش کے رکروٹس کی فہرست میں پیرس حملہ آوروں کے نام شامل

داعش کے رکروٹس کی فہرست میں پیرس حملہ آوروں کے نام شامل

حال میں منظر عام پر آئے دستاویزات سے انکشاف ۔ متاثرہ کلب کے ملازمین کے رول کی تردید
برلن 12 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) تخریب کار گروپ داعش کے دستاویزات کے افشا سے پتہ چلا ہے کہ داعش کی رکروٹمنٹ فائیلس میں پیرس پر حملہ میں ملوث تین حملہ آوروں کے نام شامل ہیں۔ شبہ ہے کہ پیرس میں جو حملے ہوئے تھے وہ سمیع امیمور ‘ فواد محمد آغا اور عمر اسمعل مصطفائی نے کئے تھے ۔ یہ حملے ایک کنسرٹ کے دوران ماہ نومبر میں ہوئے تھے ۔ اب ادعا کیا گیا ہے کہ آئی ایس آئی ایس کے دنیا بھر میں جو رکروٹس ہیں ان میں یہ تینوں نام بھی شامل ہیں۔ حالیہ دستاویزات کے افشا سے یہ پتہ چلا ہے ۔ پیرس میں ہوئے حملوں میں جن میں بندوقیں اور خود کش جیکٹس استعمال کی گئی تھیں تقریبا 90 افراد ہلاک ہوگئے تھے جس کنسرٹ میں یہ کارروائی ہوئی تھی اس کے گلوکار اور گٹاریسٹ جیسی ہیوگس نے نے کل شائقین سے معذرت کی تھی کیونکہ یہ الزام تھا کہ کلب کے سکیوریٹی گارڈز اس حملہ میں ملوث تھے ۔ ہیوگس کا کہنا تھا کہ وہ اب تک صدمہ کی کیفیت میں ہیں۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ یہ کہنا بالکل غلط ہے کہ اس کلب سے وابستہ کوئی بھی فرد حملوں میں ملوث تھا ۔ یہ الزامات بے بنیاد ہیں اور جو کوئی وہاں ملازمین ہیں ان سب کی وہ ہر طرح کی ذمہ داری لیتے ہیں۔ کہا گیا ہے کہ جرمنی ‘ امریکہ اور شامی اپوزیشن میڈیا کو داعش کی یہ فائیلس دستیاب ہوئی ہیںجن میں ان ہزاروں افراد کی شناخت ہوئی ہے جو دنیا بھرک ے 40 ممالک میں داعش کی صفوں میں شامل ہوئے تھے ۔ جرمنی کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ یہ فائیلس حقیقی ہیں۔ ان فائیلس سے اشارہ ملتا ہے کہ تین افراد جنہوں نے پیرس میں حملے کئے تھے 2013 اور 2014 میں داعش میں شامل ہوئے تھے ۔ جرمنی کے پبلک براڈکاسٹر نے یہ دستایوزات حاصل کئے ہیں اور بی بی سی نے حال میں ایک رپورٹ میں یہ اطلاع دی ہے ۔ کہا گیا ہے کہ 29 سالہ فرانسیسی شہری مصطفائی کی شناخت ایک کٹی ہوئی انگلی سے ہوئی ہے جو حملہ کے مقام سے دستیاب ہوئی تھی ۔ یہ شخص پیرس کے مضافات میں ایک غریب علاقہ کا ساکن تھا ۔ ان فائیلس کی سب سے پہلے آن لائین اشاعت عمل میں آئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT