Sunday , September 24 2017
Home / عرب دنیا / داعش کے ہاتھوں 19 یزیدی لڑکیاں نذرآتش

داعش کے ہاتھوں 19 یزیدی لڑکیاں نذرآتش

بغداد ۔ 7 جون (سیاست ڈاٹ کام) عراق میں متعدد ویب سائٹوں نے یہ خبر دی ہے کہ داعش تنظیم نے شمالی شہر موصل میں 19 یزیدی لڑکیوں کو جلا ڈالا۔ تفصیلات کے مطابق دہشت گرد تنظیم نے لوہے کے پنجروں میں مذکورہ لڑکیوں کو ڈال کر ان میں آگ لگا دی۔ یہ وہ طریقہ ہے جس کے ذریعے فروری 2015 میں داعش نے اردن کے ایک پائلٹ معاذ الکساسبہ کو جلا کر مار ڈالا تھا اور اس کارروائی کی وڈیو بھی جاری کی تھی۔ کردستان نیشنل یونین کے بیورو کی جانب سے جاری بیان میں ایک عینی شاہد کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ “ان تمام لڑکیوں کو اس واسطے موت کے گھاٹ اتارا گیا کہ انہوں نے شدت پسندوں کی خدمت کے لیے باندیاں بننے سے انکار کر دیا تھا”۔ اس دورانARA News ویب سائٹ کا کہنا ہے کہ موصل شہر میں داعش تنظیم کے 6 ارکان نے 19 یزیدی خواتین اور لڑکیوں کو دھات کے بنے ہوئے ڈرموں میں ڈال کر ان پر پیٹرول چھڑک دیا اور پھر ان کو آگ لگا دی تھی۔ اس سے قبل تنظیم نے ان تمام خواتین کو پنجروں میں ڈال کر ان کو شہر کی سڑکوں پر گشت کرایا تھا۔

TOPPOPULARRECENT