Sunday , October 22 2017
Home / ہندوستان / دالوں کی قیمت میں غیر معمولی اضافہ کیلئے حکومت ذمہ دار

دالوں کی قیمت میں غیر معمولی اضافہ کیلئے حکومت ذمہ دار

مہاراشٹرا کے سابق وزیر سیول سپلائز انیل دیشمکھ کا الزام
ناگپور ۔ 10 ۔ نومبر : ( سیاست ڈاٹ کام) : سینئیر این سی پی لیڈر اور مہاراشٹرا کے سابق وزیر سیول سپلائز مسٹر انیل دیشمکھ نے آج دالوں کی قیمت میں غیر معمولی اضافہ کے لیے بی جے پی ۔ شیوسینا حکومت کو مورد الزام ٹھہرایا ہے ۔ دیویندر فڈنویس حکومت کے اس دعویٰ پر کہ ریاست بھر میں عوام کو 100 روپئے فی کلو تور کی دال سربراہ کی جارہی ہے ۔ مضحکہ خیز قرار دیتے ہوئے مسٹر دیشمکھ نے کہا کہ تہواروں کے موسم میں عام آدمی فی کلو دال خریدنے کے لیے 180 روپئے تا 200 روپئے ادا کرنے پر مجبور ہے کیوں کہ حکومت حالات سے نمٹنے میں یکسر ناکام ہوگئی ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ فی الحال ریاست میں غذائی اجناس کی قیمتوں پر کنٹرول کے لیے کوئی میکانزم نہیں ہے ۔ این سی پی لیڈر نے کہا کہ دالوں کے ذخیرہ پر تحدیدات بھی تاخیر سے عائد کی گئیں اور حکومت نے دالوں کی درآمدات کا اقدام کرتے ہوئے فاش غلطی کی ہے ۔ دوسری طرف اسٹاک حد کو مستثنیٰ کرتے ہوئے دالوں کے درآمدات کی اجازت دیدی گئی جس کے نتیجہ میں تاجرین تادیبی کارروائی کے خوف بحیری جہازوں سے دالیں حاصل کرنے میں پس و پیش کررہے ہیں ۔ اور سربراہی پر تحدیدات سے مصنوعی قلت پیدا ہوجانے کے باعث قیمتوں میں مزید اضافہ ہوگیا ہے ۔ اپنا تجربہ بیان کرتے ہوئے سابق وزیر نے کہا کہ پیشرو حکومت کے دور میں قیمتوں پر نگرانی کے لیے ایک خصوصی شعبہ قائم کیا گیا تھا جو کہ مارکٹ میں غذائی اجناس کی قیمتوں پر کنٹرول کرتا تھا ایک مرتبہ دال کی قیمت میں اضافہ ہونے پر حکومت نے فی الفور مداخلت کرتے ہوئے ڈیلروں کے اسٹاک پر حد بندی لگادی گئی تھی ۔ لیکن بی جے پی کی زیر قیادت حکومت نے اس طرح کے خصوصی شعبہ کو برخاست کردیا ہے جب کہ کانگریس ۔ این سی پی حکومت نے عوامی تقسیم نظام کے زائد راشن شاپس پر 55 روپئے فی کلو دال سربراہ کیا تھا ۔ انہوں نے ادعا کیا کہ تقریبا 10-12 شپس ( بحری جہاز ) دالوں کے ذخائر کے ساتھ گذشتہ 15 یوم سے بندرگاہ پر ٹہرے ہوئے ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ ضبط شدہ دالوں کے ذخائر کو راشن کی دکانات پر فروخت کرنے کی بجائے حکومت نے تاجروں کو یہ اسٹاک واپس کرتے ہوئے 100 روپئے کلو فروخت کرنے کی ہدایت دی ہے جو کہ عملی طور پر ناممکن ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT