Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / دتاتریہ اور کشن ریڈی پر ٹکٹوں کی فروخت کا الزام

دتاتریہ اور کشن ریڈی پر ٹکٹوں کی فروخت کا الزام

ٹی آر ایس سے خفیہ ساز باز ، پارٹی کے کئی امیدوار ڈمی : راجہ سنگھ
حیدرآباد ۔ 22 ۔ جنوری : ( سیاست نیوز) : بی جے پی قیادت سے بغاوت کرنے والے بی جے پی کے رکن اسمبلی راجہ سنگھ نے مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ اور بی جے پی کے ریاستی صدر کشن ریڈی پر ٹکٹس فروخت کرنے کا الزام عائد کیا اور بی جے پی کی انتخابی مہم سے دور رہنے کا الزام عائد کیا ۔ اسمبلی حلقہ گوشہ محل کی نمائندگی کرنے والے بی جے پی کے رکن اسمبلی راجہ سنگھ نے پارٹی کے قومی صدر امیت شاہ کو 4 صفحات پر مشتمل مکتوب روانہ کرتے ہوئے انہیں بتایا کہ مقامی پارٹی قیادت بالخصوص مرکزی وزیر بنڈارو دتاتریہ اور بی جے پی تلنگانہ یونٹ کے صدر جی کشن ریڈی نے حکمران ٹی آر ایس سے خفیہ سازباز کرتے ہوئے ڈمی امیدواروں کو انتخابی مہم میں اتارا ہے ۔ تلگو دیشم اور بی جے پی اتحاد سے گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کے انتخابات میں دونوں جماعتوں کی 100 نشستوں پر کامیابی کے لیے سازگار ماحول ہے تاہم بی جے پی کے دونوں قائدین نے پارٹی کے اہم قائدین کو نظر انداز کرتے ہوئے کنٹراکٹرس اور رئیل اسٹیٹ کاروبار کرنے والوں کو ٹکٹ دیتے ہوئے بی جے پی کیڈر کو مایوس کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جی ایچ ایم سی انتخابات میں بی جے پی کی کامیابی کے لیے ہندوتوا ریکارڈ رکھنے والوں کو پارٹی ٹکٹ دیا جانا تھا ۔ ان کے تجویز کردہ ایک بھی قائد کو ٹکٹ نہیں دیا گیا ہے ۔ جس سے انہیں کافی تکلیف پہونچی ہے ۔ ان کے حامی اور بی جے پی کا کیڈر مایوس ہے ۔ بنڈارو دتاتریہ اور جی کشن ریڈی کے رویہ سے ناراض ہو کر سابق رکن اسمبلی پریم سنگھ راٹھور اور بی جے پی رنگاریڈی ضلع کے صدر بطور احتجاج پارٹی سے مستعفی ہوچکے ہیں اور پارٹی کی انتخابی مہم سے دوری اختیار کرنے کا فیصلہ کرچکے ہیں ۔ اپنے اس فیصلے سے بی جے پی ہائی کمان کو مکتوب کے ذریعہ واقف کراچکے ہیں ۔۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT