Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / درگاہ جہانگیر پیراںؒ کی ترقی کیلئے جامع منصوبہ بندی

درگاہ جہانگیر پیراںؒ کی ترقی کیلئے جامع منصوبہ بندی

زائرین کو ہر ممکنہ سہولتیں فراہم کرنے جناب شکیل عامر صدرنشین اقلیتی بہبود کمیٹی کا تیقن
شاد نگر۔ 8 ڈسمبر (سیاست ￿نیوز) درگاہوں پر عقیدت و احترام کے ساتھ حاضری دینے والے زائرین خصوصی مہمان ہوتے ہیں۔ درگاہ حضرت جہانگیر پیراںؒ 700 سالہ قدیم درگاہ شریف ہے۔ یہاں بلالحاظ مذہب و ملت زائرین بڑے عقیدت و احترام کے ساتھ حاضری دیتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ حکومت کی جانب سے درگاہ کے پاس ترقیاتی کام انجام دینے کیلئے ایک جامع منصوبہ تیار کیا گیاہے۔ تیار شدہ جدید ماسٹر پلان میں زائرین کو تمام بنیادی سہولتوں کا پورا خیال رکھا گیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی صدرنشین اقلیتی بہبود مقننہ کمیٹی محمد شکیل عامر نے درگاہ کے قریب منعقدہ جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے اپنی تقریر کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ قریب منعقدہ جائزہ اجلاس سے مخاطب کرتے ہوئے کیا۔ وقف کی ہوئی ہر شئے اللہ کی امانت ہوتی ہے۔ وقف کی ہوئی امانت کو ہر ایک ذمہ دار حفاظت کرنا چاہئے۔ شکیل عامر نے کہا کہ 1978ء میں ریاستی وقف بورڈ نے درگاہ کے اطراف میں واقع 25 ایکڑ سرکاری اراضی خریدی گئی۔ اس کے بعد سے مذکورہ خریدی گئی اراضی کا ریوینیو ریکارڈ میں اندراج نہیں کروایا گیا۔ شکیل عامر نے ریوینیو حکام پر زور دیتے ہوئے کہا کہ خریدی گئی 25 ایکڑ اراضی کو وقف بورڈ کے نام پر منتقل کریں۔ درگاہ کے قریب واقع تالاب کو ٹینک بانڈ کی طرح تیار کرنے کا بھی انہوں نے تیقن دیا۔ درگاہ کے تحت چلائے جانے والے اُردو میڈیم اسکولس میں طلباء کی عدم موجودگی کے باوجود ایک لاکھ سے زائد رقم اساتذہ پر ماہانہ خرچ کئے جانے پر افسوس کا اظہار کیا۔ انہوں نے مقامی رکن اسمبلی انجیا یادو پر زور دیتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ حکومت جدید ریسیڈنشیل اسکول قائم کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ یہاں پر ریسیڈنشیل اسکول قائم کرنے کیلئے چیف منسٹر کے سی آر سے نمائندگی کریں گے۔ شکیل عامر نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے چندر شیکھر راؤ اقلیتوں کے ہمدرد ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اقامتی اسکولوں میں تلنگانہ حکومت ہر زبان میں بچوں کو تعلیم فراہم کررہی ہے۔ تلنگانہ حکومت ، ریاستی وقف بورڈ جوڈیشیل اختیار فراہم کرنے کا منصوبہ کررہی ہے۔ درگاہ پر زیارت کی غرض سے آنے والے زائرین کو ہر ممکنہ سہولت مہیا کرنے کا اقلیتی بہبود کمیٹی کوشش کررہی ہے۔ اقلیتی بہبود کمیٹی عملی کام کررہی ہے۔ درگاہ کے ماسٹر پلان میں 2 بائی پاس روڈ ڈالوا رہے ہیں تاکہ زائرین کو کسی طرح کی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے گا۔ درگاہ کے ماسٹر پلان کو عملی جامہ پہنانے کیلئے عوامی تعاون کو ضروری قرار دیا۔ مقامی عوام اور درگاہ کے قریب چھوٹے چھوٹے تجارت پیشہ افراد کو نقصان پہنچا۔ بغیر ماسٹر پلان پر عمل کیا جائے گا۔ قبل ازیں درگاہ کے دوکان داروں، مجاوروں اور مقامی عوام کے درپیش مسائل کی سماعت کی اور درگاہ کے گتہ کے متعلق شکیل عامر نے کہا کہ گتہ ہراج کے معاملے کی رقم کی ادائیگی میں سہولت مہیا کرنے پر زور دیا۔ ہر ایک کے ساتھ انصاف کرنے کا شکیل عامر نے تیقن دیا۔ قبل ازیں ریاستی صدرنشین اقلیتی بہبود مقننہ کمیٹی محمد شکیل عامر، ایم ایل سی اسٹیفنسن، سیکریٹری بہبود سید عمر جلیل، جوائنٹ کلکٹر سندر ابنار، سی ای او وقف بورڈ محمد اسداللہ کے علاوہ دیگر وقف بورڈ کے اعلیٰ عہدیدار اور ریوینیو عہدیدار درگاہ شریف پر حاضری دیتے ہوئے چادر گل و فاتحہ خوانی کی۔ شکیل عامر نے جائزہ اجلاس کو مخاطب کرتے ہوئے سیکریٹری اقلیتی بہبود سید عمر جلیل اور سی ای او اسداللہ پر زور دیتے ہوئے کہا کہ محکمہ وقف بورڈ میں تعمیری کاموں کی انجام دہی کیلئے انجینئرنگ شعبہ قائم کرنے پر زور دیا۔ درگاہ شریف میں زائرین کو سہولت مہیا کرتے ہوئے درگاہ شریف کی آمدنی میں اضافہ کرنے کے اقدامات کرنے کی وقف بورڈ عہدیداروں کو ہدایت دی۔ شاندار پیمانے پر درگاہ میں ترقیاتی کام انجام دینے کیلئے تلنگانہ حکومت سنجیدہ ہے۔ رکن اسمبلی شاد نگر وائی انجیا یادو نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ درگاہ کی ترقی اور یہاں پر بنیادی سہولتوں کی فراہمی کیلئے ممکنہ تعاون فراہم کرنے کا تیقن دیا۔ درگاہ کو ترقی فراہم کرنے کیلئے چیف منسٹر کے سی آر بھی کافی سنجیدہ ہیں۔ اس موقع پر مقامی عوام ، زائرین اور سیاسی قائدین موجود تھے۔ شکیل عامر صدرنشین اقلیتی بہبود مقننہ کمیٹی، اسٹیفنسن ایم ایل سی، رکن اسمبلی شاد نگر وائی انجیا یادو نے درگاہ کے تیار کردہ ماسٹر پلان کا مشاہدہ کیا اور عہدیداروں سے تفصیلات حاصل کیں۔ درگاہ کے پاس ترقیاتی کاموں کی انجام دہی کیلئے عوامی تعاون کو ضروری قرار دیا۔ اس موقع پر زمرد خان نے شکیل عامر کو درگاہ جہانگیر پیراںؒ کے تحت ہورہے ترقیاتی کاموں کامعائنہ کروایا۔

TOPPOPULARRECENT