Monday , August 21 2017
Home / شہر کی خبریں / درگاہ حضرات یوسفین ؒ کے احاطہ میں کچرے کے انبار پر برہمی

درگاہ حضرات یوسفین ؒ کے احاطہ میں کچرے کے انبار پر برہمی

عرس شریف کے انتظامات کا جائزہ، الحاج محمد سلیم چیرمین وقف بورڈ کا دورہ

حیدرآباد۔/5اگسٹ، ( سیاست نیوز) درگاہ حضرات یوسفینؒ نامپلی کے انتظامات کا جائزہ لینے کیلئے صدرنشین وقف بورڈ محمد سلیم نے آج مختلف محکمہ جات کے عہدیداروں کے ساتھ دورہ کیا۔ برقی، آبرسانی، پولیس اور مجلس بلدیہ کے عہدیداروں کے ہمراہ کئے گئے اس دورہ کا مقصد مجوزہ عرس کے بہتر انتظامات کو یقینی بنانا ہے۔ چیف ایکزیکیٹو آفیسر ایم اے منان فاروقی اور وقف بورڈ کے دیگر عہدیداروں کے ہمراہ صدرنشین نے درگاہ کے اندرونی حصہ اور اطراف واکناف کے علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے صحت و صفائی کے انتظامات کا جائزہ لیا۔ انہوں نے قبروں پر تعمیر کردہ دکانات کے فوری تخلیہ کی ہدایت دی اور کہا کہ گزشتہ دورہ کے موقع پر انہوں نے اس سلسلہ میں دکانداروں کو مہلت دی تھی لیکن اب مزید مہلت نہیں دی جائے گی۔ درگاہ اور قبروں کا احترام ہر ایک کی ذمہ داری ہے اور وقف بورڈ غیر مجاز ملگیات کے خلاف سخت کارروائی کرے گا۔ انہوں نے مجلس بلدیہ کے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ عرس کے موقع پر اطراف و اکناف کے علاقوں میں صحت و صفائی کے خصوصی انتظامات کریں۔ درگاہ کے قریب کچرے کے انبار پر صدرنشین نے ناراضگی جتائی اور کہا کہ کچرے کی عدم نکاسی کے سبب زائرین کو مشکلات پیدا ہوں گی، اس کے علاوہ مختلف بیماریوں کے پھوٹ پڑنے کا اندیشہ رہے گا۔ انہوں نے عرس تقاریب کے دوران برقی کی بلاوقفہ سربراہی اور امن و ضبط کی صورتحال کو قابو میں رکھنے کیلئے پولیس اور ٹریفک پولیس کے موثر انتظامات کی ہدایت دی۔ جاریہ سال وقف بورڈ کی راست نگرانی میں عرس کے انتظامات کئے جائیں گے کیونکہ درگاہ کیلئے کوئی متولی نہیں ہے اور یہ معاملہ عدالت میں زیر دوران ہے۔ درگاہ شریف پہنچتے ہی صدرنشین وقف بورڈ نے پہلے حاضری دی اور چادرگل پیش کرتے ہوئے فاتحہ خوانی کی۔ انہوں نے طہارت خانوں اور وضؤ خانوں کی صفائی پر توجہ دینے کی ہدایت دی۔ آج مقررہ پروگرام کے مطابق ہفتہ کے دن غلاف تبدیل کیا گیا اور خدمت گذاروں کے ساتھ وقف بورڈ کے اسٹاف نے اس رسم کو انجام دیا۔ 12 اگسٹ کو رسم جھیلہ کا اہتمام کیا جائے گا جبکہ 28 تا 30 اگسٹ تقاریب عرس منعقد کی جائیں گی۔ تمام متعلقہ محکمہ جات نے موثر انتظامات کا تیقن دیا۔ اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ حوض کی صفائی اور وضؤ کیلئے موثر انتظامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پولیس اور بلدیہ کے تعاون سے قبروں پر تعمیر کردہ دکانات کو برخواست کردیا جائے گا کیونکہ قبروں کے احترام کے سلسلہ میں کوئی مفاہمت نہیں کی جائے گی۔ اگر دکاندار اپنے طور پر تخلیہ نہ کریں تو انہیں جبراً علحدہ کیا جائے گا۔ محمد سلیم نے کہا کہ درگاہ کا احترام ہر کسی کی ذمہ داری ہے اور وضؤ اور طہارت کے بغیر درگاہ کے احاطہ میں جانے سے گریز کرنا چاہیئے۔ مختلف مذاہب سے وابستہ افراد درگاہ میں حاضری کیلئے آتے ہیں لہذا درگاہ کا احترام ہر کسی پر لازم ہے۔ محمد سلیم نے کہا کہ بورڈکی جانب سے عرس کے موقع پر زائرین کیلئے بہتر سے بہتر سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ ہر سال کی طرح اس سال بھی غریب لڑکیوں کی شادی کا اہتمام کیا جائے گا۔ اس سلسلہ میں موصول ہونے والی تمام درخواستوں پر غور کیا جاسکتا ہے۔ دورہ کے موقع پر قبروں پر ملگیات کے مالکین نے صدرنشین وقف بورڈ سے ملاقات کرتے ہوئے نمائندگی کی اور بتایا کہ گزشتہ 30 برسوں سے کاروبار کے ذریعہ خاندان کا پیٹ پال رہے ہیں اور اس طرح اچانک انہیں بیدخل کرنا مناسب نہیں۔ صدرنشین وقف بورڈ نے کہا کہ اگر وہ قبروں کی بے حرمتی سے باز آجائیں تو وقف بورڈ کی جانب سے متبادل جگہ فراہم کرنے پر غور کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT