Thursday , August 24 2017
Home / Top Stories / دستاویزات افشاء معاملہ پر ٹرمپ کی برہمی

دستاویزات افشاء معاملہ پر ٹرمپ کی برہمی

نیویارک، 12 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ کے نو منتخب صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے روس کے پاس ان کے خلاف متنازعہ دستاویزات ہونے کے لئے اپنے ہی ملک کی خٖفیہ ایجنسیوں کو ذمہ دار ٹھہرایا اور کہا کہ یہ نازی جرمنی میں رہنے کے مترادف ہے۔ امریکہ کے 45 ویں صدر کے طور پر حلف برداری کرنے سے نو دن پہلے کی گئی اپنی پریس کانفرنس میں انہوں نے خفیہ ایجنسیوں سے لیک اس دستاویز کو بے بنیاد اور جھوٹا قرار دیا جس میں کہا گیا ہے کہ روسی حکام کے پاس ٹرمپ کا متنازعہ دستاویز ہے ۔ٹرمپ نے پریس کانفرنس میں کہاکہ میرا خیال ہے کہ یہ شرمناک ہے ،کہ خٖفیہ ایجنسیوں نے ایک ایسی خبر کو باہر جانے دیا جو غلط ہے اور جھوٹ ہے ۔ مجھے لگتا ہے کہ یہ ایک توہین ہے اور یہ بالکل ‘نازی جرمنی میں رہنے کے مترادف ہے۔ انہوں نے پہلی بار یہ تسلیم کیا کہ صدارتی انتخابات کے دوران ڈیموکریٹک نیشنل کمیٹی کی ہیکنگ میں شاید روس کا ہاتھ تھا لیکن ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ چین یا کسی اور کا بھی ہاتھ ہو سکتا ہے ۔ روس کے پاس ان کے خلاف حساس اطلاعات ہونے سے متعلق الزامات کے سلسلے میں ، منتخب صدر نے کہا کہ یہ فرضی خبر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ جعلی دستاویز ہے اور ایسا کبھی نہیں ہوا۔ایف بی آئی اور سی آئی اے سمیت امریکہ کی اہم انٹیلی جنس ایجنسیوں نے ٹرمپ اور سبکدوش ہونے والے صدر براک اوباما کے سامنے گزشتہ ہفتے ، 2016 میں ہوئے صدارتی انتخابات میں روسی مداخلت پر ایک رپورٹ پیش کی تھی جس میں ان الزامات کا ذکر تھا۔مسٹر ٹرمپ نے خٖفیہ اطلاعات کے لیک ہونے پر روس کے ہاتھ ہونے سے متعلق خبروں کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ یہ باہمی رشتوں کو خراب کرنے کی سازش ہے ۔مسٹر ٹرمپ اپنی انتخابی مہم کے دنوں میں روسی صدر ولادیمیر پوتن کی تعریف کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ ان کا انتظامیہ 90 دنوں کے اندر ہیکنگ معاملے کا سارا سچ سامنے لے آئے گا۔ہیکنگ کے علاوہ انہوں نے امریکہ میں روزگار بڑھانے پر بھی زور دیا۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں دواسازی کمپنیوں کے لئے نئے بولی عمل کو اختیار کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہمارے ساتھ بہت اچھے لوگ جڑ رہے ہیں۔ ہم بہت اچھا کرنے والے ہیں۔ہم اسے لے کر بہت پرجوش ہیں۔ میں روزگار کے بہت زیادہ مواقع پیدا کروں گا۔

TOPPOPULARRECENT