Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / دستور و قانون کے مطابق زندگی گزارنے سے مجرمانہ سرگرمیوں کا خاتمہ ممکن

دستور و قانون کے مطابق زندگی گزارنے سے مجرمانہ سرگرمیوں کا خاتمہ ممکن

جشن جمہوریہ ہند ، ساوینر کا رسم اجراء ، جناب زاہد علی خاں کا خطاب
حیدرآباد ۔ 16 ۔ اگست : ( سیاست نیوز ) : ملک کے نازک ترین صورتحال میں شہریوں بالخصوص مسلمانوں کو چاہئے کہ وہ دستور و آئین سے آگہی حاصل کریں ۔ اس دستور کو ڈاکٹر امبیڈکر نے تمام طبقات کو مد نظر رکھتے ہوئے ان کے مساویانہ حقوق مرتب کئے ہیں مگر افسوس کہ شرپسند عناصر اس دستور کو ماننے کے تیار و آمادہ نہیں ہے اور وقفہ وقفہ سے اس کی دھجیاں اڑائی جارہی ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار آج شام جناب زاہد علی خاں ’ جشن جمہوریہ ہند ساوینر 2017 ‘ کی رسم اجرائی انجام دینے کے بعد یہ بات کہی ۔ یہ تقریب میڈیا پلس آڈیٹوریم جامعہ نظامیہ کامپلکس گن فاونڈری میں منعقد ہوئی ۔ جناب زاہد علی خاں سلسلہ تقریر جاری رکھتے ہوئے کہا کہ اگر ملک کی ساری اقوام اس دستور پر پابند رہیں تو وہ ہر نہج پر ترقی کے منازل طئے کرسکتی ہے ۔ یہ ساوینر جو 125 صفحات پر مشتمل ہے نئی نسل کے لیے معلومات کا خزینہ اپنے میں رکھتا ہے ۔ جناب زاہد علی خاں نے سلسلہ تقریر جاری رکھتے ہوئے کہا کہ اس دستور ہند کو اس وقت تقویت ملے گی جب کہ ملک کی ساری قومیں اس کی پابندی کرتے ہوئے اس کی روشنی میں اپنے مسائل کو حل کرے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر یہاں کے شہری دستور و قانون کے تحت اپنی زندگی اور سرگرمیوں کو گذاریں گے تو اس ملک میں ایک فرد کو بھی مجرم نہیں پایا جاسکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ فسطائی طاقتیں اس ملک میں جی ایس ٹی نظام کو جس طرح دنیا بھر میں پیش کیا اسی طرح ہندوستان میں قائم کرنے کے لیے اٹل ہوچکے ہیں ۔ جناب عارف قریشی صدر انڈین کلچرل سوسائٹی بزم عثمانیہ جدہ نے خیر مقدم کیا اور کہا کہ عرصہ دراز سے سعودی عرب اور خلیجی ممالک کے تعلقات کو ہندوستان استوار کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ جسٹس ای اسماعیل نے کہا کہ ملک کا دستور بڑی محنتوں سے مدون کیا گیا اور جس وقت یہ دستور مدون کیا جارہا تھا تب مسلمانوں کو تحفظات دیئے جانے والے تھے لیکن خود مسلمانوں نے اس کی مخالفت کی ۔ ڈاکٹر احمد اللہ خاں ڈین فیکلٹی آف لاء نے کہا کہ ملک کے دستور سے ہر شہری کو واقف ہونا بے حد ضروری ہے ۔ اس تقریب میں شہر کی معزز شخصیات کے علاوہ جناب افتخار حسین سکریٹری فیض عام ٹرسٹ اور دیگر موجود تھے ۔ جناب اطیب اعجاز نے کارروائی چلائی ۔۔

TOPPOPULARRECENT