Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / دستور کی تقدیس برقرار رکھنے گورنرس کو صدرجمہوریہ کا مشورہ

دستور کی تقدیس برقرار رکھنے گورنرس کو صدرجمہوریہ کا مشورہ

آلودگی خوشحال زندگی کے حق سے محروم کررہی ہے، فوری اقدامات ضروری: پرنب مکرجی
نئی دہلی 9 فروری (سیاست ڈاٹ کام) گورنروں کے کردار پر تنازعات کے پس منظر میں صدرجمہوریہ پرنب مکرجی نے اُن تمام کو جو دستوری عہدوں پر فائز ہیں، دستور کی تقدیس برقرار رکھنے کا مشورہ دیا۔ اُنھوں نے کہاکہ آزادی کے بعد سے ہماری قوم طاقتور سے طاقتور تر ہوتی جارہی ہے۔ بنیادی طور پر اس کی وجہ یہ ہے کہ دستور میں جن اُصولوں کی طمانیت دی گئی ہے اُن کی سختی سے پابندی کی جاتی ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ یہ ایک مستقل دستاویز ہے جس سے اُن کارناموں کی جامع انداز میں نشاندہی ہوتی ہے جس سے ہندوستانی عوام کی اُمنگوں کی تکمیل ممکن ہے۔ وہ راشٹراپتی بھون میں گورنرس کی دو روزہ کانفرنس کا افتتاح کررہے تھے۔ صدرجمہوریہ نے کہاکہ اُبھرتے ہوئے تنازعات کے پیش نظر جو گورنر جے پی راج کھوا (اروناچل پردیش) کے کردار کی وجہ سے مختلف تبدیلیاں آئی ہیں جن کے نتیجہ میں ریاست میں صدر راج نافذ کیا گیا۔ صدرجمہوریہ نے کہاکہ اِس مسئلہ پر ایک مقدمہ سپریم کورٹ میں بھی زیردوران ہے۔ اُنھوں نے کہاکہ اُن کی میعاد کا آخری سال دہشت گرد حملوں کی وجہ سے سخت مشکل رہا۔ اِن حملوں کا تعلق بیرون ملک تھا۔ اُنھوں نے کہاکہ ملک اپنی کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے تاکہ تمام بین الاقوامی مسائل پرامن بات چیت اور سودے بازی کے ذریعہ حل کئے جاسکیں۔ اُنھوں نے کہاکہ صیانتی ماحول پریشان کن ہے جس کی وجہ سے دستوری عہدوں پر فائز افراد کو محتاط رہنا چاہئے۔ اِس چوٹی کانفرنس میں 23 گورنروں اور لیفٹننٹ گورنروں نے ریاستوں اور مرکزی زیرانتظام علاقوں سے شرکت کی۔ صدرجمہوریہ نے ماحولیات کی تبدیلی پر اظہار تشویش کرتے ہوئے کہاکہ ماحولیات کی سطحیں خاص طور پر شہروں میں عوام کو صحت مند، خوشحال اور عملی زندگی کے حق سے محروم کررہی ہیں۔ وہ گورنروں کی چوٹی کانفرنس سے خطاب کررہے تھے۔ صدرجمہوریہ نے کہاکہ اِس سلسلہ میں ایک پالیسی تیار کی جانی چاہئے اور حالیہ عرصہ میں فطرت کے غیر معمولی رویہ کی وجوہات اور اِس کے مضر اثرات کا ازالہ کیا جانا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT