Tuesday , September 26 2017
Home / اضلاع کی خبریں / دسہرہ سے نئے اضلاع کے افتتاح کیلئے تیزی سے تیاریاں

دسہرہ سے نئے اضلاع کے افتتاح کیلئے تیزی سے تیاریاں

سنگاریڈی۔/8اکٹوبر، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) تلنگانہ حکومت نے ریاست میں بہتر نظم و نسق کو یقینی بنانے کی غرض سے چھوٹے اضلاع قائم کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے 21اگسٹ کو مسودہ اعلامیہ جاری کیا جس میں موجودہ دس اضلاع کے علاوہ مزید 17اضلاع قائم کرنے کی تجویز پیش کی گئی۔ تاہم عوامی مطالبات کے پیش نظر حکومت نے 17کی جگہ 21نئے اضلاع قائم کرنے کا فیصلہ کیا ۔ اس طرح 21نئے اضلاع اور پرانے دس اضلاع یعنی ریاست تلنگانہ میں اب جملہ 31 اضلاع ہوجائیں گے۔ریاستی کابینہ نے تلنگانہ ڈسٹرکٹ ری آرگنائزیشن ایکٹ میں ترمیم کی منظوری دیتے ہوئے آرڈیننس جاری کردیا ہے جس سے 21 نئے اضلاع کے قیام کی راہ ہموار ہوچکی ہے بتایا جاتا ہے کہ قانونی پیچیدگیوں سے بچنے کیلئے حکومت 11اکٹوبر کی صبح نئے اضلاع کے قیام سے متعلق حتمی نوٹیفکیشن جاری کرے گی۔ ریاستی حکومت دسہرہ تہوار کے دن یعنی11اکٹوبر کی صبح 9تا10بجے کے درمیان تمام 21نئے اضلاع کے افتتاح کی تیاریاں کررہی ہیں۔ ضلع میدک کو بھی تین اضلاع سنگاریڈی، سدی پیٹ اور میدک میں تقسیم کیا جارہا ہے۔ ضلع سنگاریڈی میں تین ریونیو ڈیویژن 26 منڈلوں 4440 مربع کیلو میٹر اور 15,23758 آبادی پر مشتمل ہوگا۔ ضلع سنگاریڈی میں ظہیرآباد، نارائن کھیڑ اور سنگاریڈی ریونیو ڈیویژن ہوں گے جبکہ سنگاریڈی، کونڈا پور، کندی، سداسیو پیٹ، پٹن چیرو، امین پور، رامچندرا پور، جنارم، گمڈولہ، پلکل، اندول، وٹ پلی، من پلی، ہتھنورہ، ظہیرآباد، مخدوم پلی، نیالکل، جھرہ سنگم، کوہیر، نارائن کھیڑ، کنگٹی، کلہیر، سرگہ پور، منور اور ناگل گدہ منڈل ضلع سنگاریڈی میں شامل ہیں، نو تشکیل شدنی ضلع سدی پیٹ دو ریونیو ڈیویژن سدی پیٹ اور گجویل کے علاوہ 20منڈل 3431 مربع کلو میٹر رقبہ اور 9,72,812 آبادی پر مشتمل ہوگا۔ سدی پیٹ ضلع میں سدی پیٹ اربن، سدی پیٹ رورل، ننگنور، چنا کوڈور، توگٹہ، دولت آباد، میردوڈی، دوباک، حسن آباد، کوہیڈا، گجویل، جگدیوپور، کونڈا پاک، ملگ، مروکوک، ورگل، رائے پول، چیریال، کمرولی اور مدور منڈل شامل ہیں ۔ ضلع سدی پیٹ کو ایس پی آفس کی جگہ پولیس کمشنریٹ منظور کیا گیا۔ ضلع میدک تین ریونیو ڈیویژن میدک، توپران اور نرسا پور 19منڈل، 2722 مربع کیلو میٹر رقبہ اور 7,67,428 نفوس آبادی پر مشتمل ہوگا، ضلع میدک میں میدک، حویلی گھن پور، پاپنا پیٹ، چنا شنکرم پیٹ، ٹیکمال، پدا شنکرم پیٹ، الہ درگ، ریگوڑ، رامائم پیٹ، نام پیٹ ، ویلدرتی، چیگنٹہ، توپران، منوہر آباد، نرسا پور، شیوم پیٹ، کوڑی پلی، کلچارم اورچیلچیڈ منڈل اس میں شامل ہیں۔ بہ اعتبار رقبہ تعداد منڈل اور آبادی ضلع سنگاریڈی اضلاع میدک و سدی پیٹ سے بڑا ہے۔ ضلع سنگاریڈی میں اسمبلی حلقہ جات سنگاریڈی، پٹن چیرو، ظہیرآباد، نارائن کھیڑ مکمل طور پر شامل ہیں جبکہ اسمبلی حلقہ جات اندول اور نرسا پور کے دوایک منڈلوں کو ضلع سنگاریڈی میں شامل کیا گیا ہے اور توقع کی جارہی ہے کہ 2019 اسمبلی انتخابات سے قبل اسمبلی حلقہ جات کی ازسر نو حد بندی کے موقع پر ضلع سنگاریڈی میں مزید ایک اسمبلی حلقہ کا اضافہ ہوگا۔ نئے اضلاع میدک اور سدی پیٹ میں دسہرہ کے دن یعنی 11 اکٹوبر سے کام شروع کرنے کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ کلکٹر آفس، ایس پی آفس اور دیگر محکمہ جاتی دفاتر کے قیام کیلئے ان اضلاع میں عمارتوں کا انتخاب ہوچکا ہے۔ فرنیچر و دیگر ضروری انفراسٹرکچر، موٹر گاڑیوں اور فائیلوں کی تقسیم کا عمل بھی مکمل کرتے ہوئے ان اضلاع کو روانہ کردیا گیا ہے۔ ملازمین کی تقسیم کا عمل بھی شروع ہوچکا ہے اور توقع ہے کہ 10 اکٹوبر کو آرڈرٹو سرو کے ذریعہ ان کو مختلف اضلاع کو روانہ کردیا جائیگا۔ ضلع میدک کا مستقر سنگاریڈی تھا چنانچہ تمام ضلعی دفاتر یہاں پر موجود تھے اور کچھ عرصہ قبل وسیع و عریض اور دلکش کلکٹریٹ بلڈنگ کی تعمیر کی گئی تھی۔ چنانچہ یہاں پر عمارتوں اور سہولتوں کا کوئی مسئلہ نہیں ہے۔ سنگاریڈی ضلع مستقر ہونے کی وجہ سے حکومت نے اس کو قدیم اضلاع کی فہرست میں شمار کیا ہے چنانچہ 11اکٹوبر کی صبح صرف میدک اور سدی پیٹ اضلاع کیلئے افتتاجی تقریب منعقد ہوگی۔

TOPPOPULARRECENT