Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / دفتر سیاست میں اسلامک بینکنگ کے تربیتی کلاسیس

دفتر سیاست میں اسلامک بینکنگ کے تربیتی کلاسیس

5 مارچ سے کورس کا آغاز، سیاست کا انسٹی ٹیوٹ آف اسلامک بینکنگ فینانس اینڈ انشورنس سے اشتراک
حیدرآباد۔   22 فروری(  سیاست نیوز)  انسٹی ٹیوٹ آف اسلامک بینکنگ فینانس اینڈ انشورنس اور ادارہ سیاست کی جانب سے مشترکہ طور پر اسلامک بینکنگ کے تربیتی کلاسیس کا آغاز ہوگا۔5 مارچ سے شروع ہونے والی ان تربیتی کلاسیس میں داخلوں کیلئے طلباء دفتر سیاست پر 10 تا  2 بجے دن رابطہ قائم کرسکتے ہیں یا پھر فون نمبرات 07598000555 یا 09449240080 پر تفصیلات حاصل کرسکتے ہیں۔ جناب ایم ایس شریف نے آج دفتر سیاست پر منعقدہ ایک پریس کانفرنس کے دوران یہ بات بتائی۔ اس موقع پر جناب عامر علی خاں نیوز ایڈیٹر روزنامہ سیاست ، جناب عاصم فاروقی ، جناب محمد اعظم اور دیگر موجود تھے۔ جناب عاصم فاروقی نے بتایا کہ ریزرو بینک آف انڈیا کی جانب سے جو سفارشات جاری کی گئی ہیں ان کے مطابق ہندوستانی بینکوں میں سود سے پاک بینک کاری نظام رائج کرنے کی سفارش بھی شامل ہے۔ انہوں نے بتایا کہ انسٹی ٹیوٹ آف اسلامک بینکنگ فینانس اینڈ انشورنس کی جانب سے نوجوانوں کی تربیت کیلئے نصاب تیار کرتے ہوئے انہیں سود سے پاک بینک کاری نظام میں ملازمت کے حصول کیلئے تیار کیا جارہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تاحال آئی آئی بی ایف آئی کی جانب سے 215 سے زائد نوجوانوں کو تربیت دی گئی ہے جن میں بیشتر نوجوان خلیجی ممالک روزگار حاصل کرنے میں کامیاب ہوچکے ہیں۔ جناب عاصم فاروقی نے کہا کہ اب تک ان کے ادارے کی جانب سے آن لائین تربیت فراہم کی جارہی تھی جس کے ذریعہ 24 ہزار روپئے فیس وصول کی جارہی تھی لیکن اب اس کورس کو 20 ہزار روپئے میں مکمل کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ادارہ سیاست نے فی طالب علم 10 ہزار روپئے اخراجات اٹھانے کا اعلان کیا ہے اور 10 ہزار روپئے طالب علم کو ادا کرنے ہوں گے۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ مستقبل قریب میں سود سے پاک بینک کاری نظام کو زبردست مقبولیت حاصل ہوگی اسی لئے اس شعبہ میں اس نظام سے واقف نوجوانوں کو تیار کیا جانا ضروری ہے۔ اسی لئے ان کے ادارے نے سیاست کے تعاون سے 100 گھنٹوں پر مشتمل ان کلاسیس کے آغاز کا فیصلہ کیا ہے۔ جناب ایم ایس شریف نے بتایا کہ ان کلاسیس میں داخلہ کے حصول کیلئے کامرس کا طالب علم  ہونا ضروری ہے۔ چونکہ بینک کاری نظام میں کامرس کے طالب علم کی ہی ضرورت ہوتی ہے۔ دو ماہ پر مشتمل اس کورس کے دوران ہفتہ میں تین یوم کلاسیس کا اہتمام کیا جائے گا۔ اس کورس کے دوران طلبہ میں موجود صلاحیتوں کو نکھارنے کی کوشش بھی کی جائے گی۔ انہوں نے بتایا کہ اس ادارہ کی جانب سے ہمیشہ  سودی نظام سے پاک تجارتی امور کو فروغ دینے کی کوشش کی جاتی رہی ہے اور مستقبل میں بھی شرعی تجارت کے امور کیلئے مشیر تیار کرنے کا منصوبہ ہے۔ اسلامک بینک کاری نظام کو رائج کرنے سے قبل اس نظام میں خدمات کی انجام دہی کیلئے عددی قوت پیدا کرنا ضروری ہے۔ اسی لئے نوجوانوں کو ان کلاسیس سے استفادہ حاصل کرتے ہوئے تربیت لینی چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT