Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / دلت طالب علم کی موت کیلئے دتاتریہ اور رامچندر راؤ ذمہ دار

دلت طالب علم کی موت کیلئے دتاتریہ اور رامچندر راؤ ذمہ دار

دونوں قائدین سے استعفیٰ دینے کا مطالبہ ، ٹی آر ایس لیڈر پی روی کا بیان
حیدرآباد۔/19جنوری، ( سیاست نیوز) تلنگانہ ایس سی کارپوریشن کے صدرنشین اور ٹی آر ایس قائد پی روی نے حیدرآباد سنٹرل یونیورسٹی کے اسکالر روہت کی خودکشی کیلئے مرکزی وزیر بنڈارودتاتریہ اور بی جے پی رکن قانون ساز کونسل رامچندر راؤ کو ذمہ دار قرار دیا۔ میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے روی نے ان دونوں قائدین سے استعفی کی مانگ کی اور کہا کہ یونیورسٹی میں دلت طبقہ سے تعلق رکھنے والے طالب علم کی خودکشی ایک سنگین معاملہ ہے اور بنڈارودتاتریہ کی جانب سے لکھے گئے مکتوب کے سبب وزارت فروغ انسانی وسائل نے 5 دلت طلباء کو معطل کرنے کی کارروائی کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ خودکشی کیلئے جو بھی ذمہ دار پائے جائیں ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ انہوں نے معطل کئے گئے دیگر 4 طلباء کے خلاف کارروائی سے فوری دستبرداری کی مانگ کی ہے۔ ٹی آر ایس قائد نے طالب علم کی خودکشی اور یونیورسٹی میں دلتوں کے خلاف ہراسانی کے واقعات کی جامع تحقیقات کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے اس واقعہ کے خلاف نئی دہلی میں احتجاج کرنے والے طلباء پر پولیس لاٹھی چارج کی مذمت کی اور مرکز سے مطالبہ کیا کہ وہ خاطی پولیس عہدیداروں کے خلاف کارروائی کرے۔

TOPPOPULARRECENT