Friday , August 18 2017
Home / عرب دنیا / دوبئی میں ویزٹ ویزا پر روزگار کی تلاش سنگین کیس

دوبئی میں ویزٹ ویزا پر روزگار کی تلاش سنگین کیس

ہندوستانیوں کو ایجنٹوں کے جھانسوں میں نہ آنے ہندوستانی قونصل کا مشورہ
دوبئی ۔ 3 اگست (سیاست ڈاٹ کام) متحدہ عرب امارات میں روزگار کی تلاش میں نکلنے والے ہندوستانیوں کو چاہئے کہ وہ ویزٹ ویزا پر آ کر روزگار حاصل نہ کرے۔ ہندوستانی قونصل جنرل نے ہندوستانیوں کو مشورہ دیا کہ وہ ایجنٹوں کے جھانسے میں نہ آئے۔ دوبئی میں پہنچنے سے قبل اپنے ویزا کی جانچ کرلیں اور اپنے کفیل کی جانب سے پیش کی جانے والی ملازمت اور مستقل ویزا کے مصدقہ ہونے کی جانچ کرلیں کیونکہ ویزا کے تعلق سے دھوکہ دہی کی جارہی ہے۔ ہندوستانی قونصل خانہ کو ملنے والے فون کالس اور شکایتوں کے پیش نظر یہ اڈوائزری جاری کی گئی ہیکہ ہندوستانی ورکرس ایجنٹوں کے جھانسے میں نہ آئیں بلکہ دوبئی میں روزگار فراہم کرنے والے کفیلوں کے بارے میں معلومات حاصل کریں۔ دوبئی میں تعینات قونصل جنرل آف انڈیا ویپل نے کہا کہ ایسے کسی واقعہ پر سفارتخانہ کے پاس کوئی ڈیٹا نہیں ہوتا جس کے ذریعہ وہ خاطیوں کی نشاندہی کرسکے۔ وپل نے بتایا کہ ہمیں ہر روز عوام کے مشکلات سے متعلق کئی کیسیس وصول ہوتے ہیں ۔ جب ہندوستانی عوام روزگار کی تلاش میں ویزٹ ویزا پر یہاں پہنچتے ہیں تو انہیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ دھوکہ باز ایجنٹوں کے ذریعہ دوبئی آنے والی خواتین کو اچھے کام دینے کے بجائے خادمہ کے طور پر کام کرنے کیلئے مجبور کیا جاتا ہے۔ اس طرح دھوکہ دہی کا شکار نازک کیس ہمارے سامنے آتے ہیں تو سفارتخانہ کی جانب سے ان پریشان حال ہندوستانیوں کے آجرین سے ثالثی کرکے مسئلہ حل کرنے کی کوشش کی جاتی ہے تاکہ وہ اپنا پاسپورٹ حاصل کرکے ہندوستان واپس ہوسکیں۔ قونصل خانہ نے سال 2016ء میں 225 ایئرٹکٹ جاری کئے تھے اور 2017ء میں 186 ورکرس کو ٹکٹ دیئے گئے۔

TOPPOPULARRECENT