Saturday , September 23 2017
Home / عرب دنیا / دوبئی میں ہندو پاک کانفرنس کا چھ نکاتی خاکہ منظور

دوبئی میں ہندو پاک کانفرنس کا چھ نکاتی خاکہ منظور

دوبئی۔ 21 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) آر پار تجارت کے نئے خدوخال کا تعین کرنے کے لئے چھ نکاتی خاکہ منظور کرتے ہوئے دبئی کانفرنس کے شرکاء نے ہندوپاک حکام پر زور دیا ہے کہ وہ اعتماد بحالی کی کوششوں کے تحت سرحد پار تجارت کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کریں۔ ہندوستانی میڈیا کے مطابق متحدہ عرب امارات کے شہر دوبئی میں ہونے والی دو روزہ کانفرنس میں ریاست کے تین خطوط بشمول جموں و کشمیر اور کشمیر سے تعلق رکھنے والے تاجران، صنعتکاروں اور کارخانہ داروں کی مختلف انجمنوں کے ایک درجن رہنمائوں، نمائندوں کے علاوہ سیاسی شخصیات نے بھی شرکت کی۔ کانفرنس میں شریک ایل او سی کے جنرل سیکرٹری ہلال احمد کا کہنا تھا کہ اس کانفرنس میں باہمی تجارت سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا اور تاجر برادری کے نمائندوں نے مل بیٹھ کر تجارتی روابط مزید استوار کرنے پر تبادلہ خیال کیا۔ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز کشمیر کے صدر مشتاق احمد وانی اور سرحد پار تجارت سے جڑے تاجران کی رجسٹریشن انجمن گراس ایل او سی ٹریڈر اسوسی ایشن کے جنرل سیکرٹری ہلال احمد ترکی نے نئی دہلی سے مزید تفصیلات فراہم کرتے ہوئے بتایا کہ سال 2008 سے منقسم ریاست جموں و کشمیر کے سرحد پار تجارتی سرگرمیوں میں حائل رکاوٹوں کا احاطہ کیا گیا اور اس دوران شرکاء  نے اس تجارت سے جڑے سبھی معاملات کا تفصیل کے ساتھ احاطہ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ سرحد پار ٹریڈ کو چیزوں کے بدلے چیزوں کے تبادلے تک محدود رکھے جانے کی وجہ سے متعلقہ تاجران کو کاروبار میں سخت پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور بعض اوقات سرحد پار کے تاجران کے درمیان اختلافات بھی پیدا ہوتے ہیں۔ بینکنگ سہولیات خصوصی سفری پرمٹ کی اجرائی سامان کی جانچ پڑتال کو آسان بنانے کے لئے سکینروں کی جلد تنصیب، سرحد تجارت سے وابستہ تاجران کو ہر تین ماہ بعد میٹنگ کی سہولیات اور منقسم ریاست کو جوڑنے والے تمام بند پڑے راستوں کو کھولنے کا مطالبہ قابل ذکر ہے۔

TOPPOPULARRECENT