Tuesday , May 23 2017
Home / کھیل کی خبریں / دوسرا ٹسٹ : ہندوستان کے خلاف آسٹریلیا 237/6

دوسرا ٹسٹ : ہندوستان کے خلاف آسٹریلیا 237/6

BENGALURU, MAR 5:- India v Australia - Second Test cricket match - M Chinnaswamy Stadium, Bengaluru, India - 05/03/17. India's captain Virat Kohli (C) celebrates the wicket of Australia's Mitchell Marsh with team mates. REUTERS-14R

رنشا اور مارش کی نصف سنچریاں ، مشکل پچ پر 48 رنز کی سبقت ، جڈیجہ کو 3 وکٹس

بنگلورو۔ 5 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیائی بیٹسمین نے آج کریز پر جمے رہتے ہوئے ہندوستانی بولرس کو کسی حد تک پریشان کیا اور پہلی اننگز میں 48 رنز کی سبقت حاصل کرلی۔ دوسرے ٹسٹ میچ کے دوسرے دن کا کھیل ختم ہونے تک آسٹریلیا نے 237/6  رنز بنالئے۔ نوجوان اوپنر مٹ رنشا (60) اور تجربہ کار شان مارش (66) کو ہندوستانی اسپنرس کے مقابلے جدوجہد کرنی پڑی لیکن دونوں بیٹسمین نے بھی نصف سنچریاں بناتے ہوئے آسٹریلیائی ٹیم کا موقف مستحکم کیا۔ ایک ایسی بچ پر جو اسپنرس کیلئے سازگار ہے دائیں بازو کے اسپنر رویندر جڈیجہ (3/49) نے ٹیم کیلئے سب سے زیادہ وکٹس لئے  اور انہوں نے صرف 17 اوورس پھینکیں جبکہ روی چندرن اشون نے 41 اوورس کے عوض 75 رنز دے کر صرف ایک وکٹ حاصل کی۔ اشون نے متعدد مرتبہ بیٹسمین کو پریشان کیا لیکن جڈیجہ سب سے زیادہ تباہ کن بولر ثابت ہوئے۔ یہ میچ کپتان ویراٹ کوہلی کی صلاحیتوں کا امتحان تھا جہاں انہوں نے بعض اہم فیصلے کئے لیکن یہ کارآمد ثابت نہیں ہوئے۔ جڈیجہ نے جہاں بیٹسمین کو پریشان کیا، اسی وقت کوہلی کا کرون نائر کو بولنگ کا موقع فراہم کرنا مناسب نہیں تھا۔ آسٹریلیا کی ٹیم اگر اس پچ پر 100 رنز کی سبقت بھی حاصل کرلیتی ہے تو پھر ہندوستانی بیٹسمین کیلئے  صورتحال پریشان کن ہوجائے گی، کیونکہ مسلسل 3 اننگز میں 200 سے کم مجموعی اسکور بنانے کی وجہ سے وہ دباؤ کا شکار ہے۔ ہندوستان کے برخلاف آسٹریلیا نے ڈیوڈ وارنر (33) اور رنشا کی 52 رنز کی افتتاحی رفاقت نبھائی۔ اشون نے اس جوڑی کو توڑ دیا۔ کپتان اسٹیو اسمتھ (8) کو وردھیمان شاہ نے جڈیجہ کی گیند پر شاندار کیچ لیتے ہوئے آؤٹ کیا، لیکن رنشا اور مارش کی پارٹنرشپ کافی اہم ثابت ہوئی۔ ان دونوں نے ایسے وقت ذمہ داری سنبھالی جبکہ ٹیم کا اسکور 82/2 تھا۔ رنشا نے 196 گیندوں کا سامنا کیا اور کریز پر جمے رہتے ہوئے بعض دفاعی تیکنکس کا شاندار مظاہرہ کیا

اور انہوں نے آؤٹ ہونے سے قبل جڈیجہ کے اوور میں 5 چوکے اور ایک چھکا بھی لگایا۔ ایسے وقت مارش کا ساتھ دینے کیلئے میتھیو ویڈ (25 ، بیٹنگ) آئے اور ان دونوں نے چھٹی وکٹ کیلئے 57 رنز جوڑے۔ اس طرح ہندوستان کے اسکور کو پیچھے کرنے میں ٹیم کامیاب رہی۔ ہندوستان کے فاسٹ بولر ایشانت شرما نے 23 اوورس میں 39 رنز کے عوض ایک اور یادو نے 24 اوورس میں 57 رنز دے کر ایک وکٹ لی۔ ان دونوں بیٹسمین کو خاطر خواہ کامیابی نہ مل سکی۔ آسٹریلیا کے رنشا اور مارش نے ہندوستانی بولرس کا جم کا مقابلہ کیا اور اسکور آگے بڑھاتے رہے۔ آسٹریلین بیٹسمین نے صبر آزما کھیل کا مظاہرہ کیا اور صرف 18 باؤنڈری اور ایک چھکا لگایا۔ وہ سنگل رنز بھی لیتے رہے۔ دوسرا سیشن ختم ہونے تک جڈیجہ نے 13 اوورس میں 32 رنز کے عوض 3 وکٹس لئے اور ان کا بولنگ کا مظاہرہ شاندار رہا جس کی وجہ سے ہندوستانی ٹیم کھیل میں واپسی کر پائی۔ ایشانت شرما نے میشل مارش کو آؤٹ کیا۔ آسٹریلیائی ٹیم نے 35 اوورس میں 3 وکٹس کھوکر صرف 76 رنز بنا پائی۔ شان مارش 38 رنز پر بیٹنگ کررہے ہیں۔ رنشا 67 ویں اوور میں آؤٹ ہوئے اور اس کے بعد میچ کا رخ بدل گیا کیونکہ آسٹریلیا صرف 29 رنز کے اضافہ پر 3 وکٹس کھو چکی تھی۔ پیٹر ہینڈس کومب (16) اور میشل مارش (0) پر صرف 3.2 اوورس میں آؤٹ ہوئے۔ رنشا کے 60 رنز ، 196 گیندوں میں بنائے گئے جن میں 5 چوکے اور ایک چھکا شامل ہے۔ آسٹریلیا اب 26 رنز آگے ہے اور مزید 5 وکٹس اس کے پاس باقی ہیں۔ چنا سوامی اسٹیڈیم کی پچ پر رنز بنانا انتہائی مشکل ثابت ہورہا ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT