Friday , October 20 2017
Home / Top Stories / دولت اسلامیہ سے نمٹنے چین کی ہلاری کے بجائے ٹرمپ کی تائید

دولت اسلامیہ سے نمٹنے چین کی ہلاری کے بجائے ٹرمپ کی تائید

بیجنگ۔ 17 اگست (سیاست ڈاٹ کام) ری پبلیکن صدارتی امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ حالانکہ حالیہ دنوں میں چین کے خلاف زہر افشانی کرتے رہے ہیں لیکن اس کے باوجود چین نے ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار ہلاری کلنٹن پر ڈونالڈ ٹرمپ کو ترجیح دینے کا موقف اختیار کیا ہے کیونکہ ٹرمپ نے یہ وعدہ کیا ہے کہ وہ صدر بننے کی صورت میں دولت اسلامیہ کی بیخ کنی کے لئے موثر اقدامات کریں گے کیونکہ چین کے مسلم اکثریتی علاقہ ژنجیانگ سے بھی دولت اسلامیہ کی جانب راغب ہونے والوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔ سرکاری اخبار ’’گلوبل ٹائمز‘‘ کے مطابق ٹرمپ کی خارجہ پالیسی میں ’’اسلامی دہشت گردی‘‘ سے نمٹنے کو ترجیح دی گئی ہے اور چین خود اس بات کا خواہاں ہے کہ دولت اسلامیہ کی بیخ کنی کی جتنی جلد ہوجائے اتنا ہی نہ صرف امریکہ اور چین بلکہ ایسے تمام ممالک کے حق میں بہتر ہوگا جنہیں دہشت گردی کا سامنا ہے۔

انسٹیٹیوٹ آف امریکی اسٹیڈیز جس کا تعلق چائنا اکیڈیمی آف سوشیل سائنسیس سے ہے، کے ایک محقق لیو ویڈانگ نے بتایا کہ اس طرح چین اور امریکہ کے مابین پائی جانے والی کشیدگی بھی کسی حد تک کم ہوجائے گی۔ دہشت گردی سے نمٹنے چین اور امریکہ میں کئی قدریں مشترک ہیں اور ٹرمپ کی خارجہ پالیسی کی وجہ سے دنیا کے طاقتور ممالک کے درمیان مسابقت سے توجہ ہٹ کر دہشت گردی کے خاتمہ کی جانب مبذول ہوجائے گی جو چین کو ہمیشہ نشانہ بناتے رہتے ہیں۔ یہاں اس بات کا تذکرہ بھی ضروری ہے کہ چین ژنجیانگ جو مقبوضہ کشمیر اور افغانستان کی سرحد کے قریب سرگرم ایسٹ ترکستان اسلامک موومنٹ (ETIM) جو ایغور مسلمانوں بھی متحرک کرنے کی وجہ بن رہا ہے۔ چین کے لئے سب اور ساتھ ہی ساتھ صوبہ کے استحکام کے لئے بھی زبردست خطرہ ہے۔
ریٹائرڈ اعلیٰ عہدیداروں کے لیکچرز پر پابندی لگانے ٹرمپ کا بیان
واشنگٹن۔ 17 اگست (سیاست ڈاٹ کام) امریکی صدارتی ری پبلکن امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ نے ایک اور متنازعہ بیان دیدیا ہے ، کہتے ہیں کہ وہ صدر منتخب ہوئے تو اعلیٰ عہدیداروں پر ریٹائرمنٹ کے بعد فیس لے کر لیکچرز دینے پر 5 سال کی پابندی لگادیں گے۔امریکی ریاست وسکونسن میں ریلی سے خطاب میں کہاکہ منتخب ہوا تو اعلیٰ عہدیداروں پر ریٹائرمنٹ کے بعد فیس لے کر لیکچرز دینے پر 5 سال کی پابندی لگاؤں گا اور اس مقصد کے لیے اعلیٰ عہدے داروں سے تحریری یقین دہانی لوں گا۔انہوں نے مزید کہا کہ غیرت کے نام پر قتل خوفناک عمل ہے جو ہمارے معاشرے تک بھی پہنچ گیا ہے۔ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ پاکستان میں ہرسال ایک ہزار سے زائد خواتین کو غیرت کے نام پر قتل کردیا جاتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT