Sunday , August 20 2017
Home / دنیا / دولت اسلامیہ پر بمباری کیلئے امریکی جنگی طیاروں کی تعیناتی

دولت اسلامیہ پر بمباری کیلئے امریکی جنگی طیاروں کی تعیناتی

اپریل سے بمباری کا آغاز متوقع ‘ B-52طیاروں کی تعیناتی خطرناک
واشنگٹن۔6مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکہ اپنے نیوکلیئر صلاحیت والے B-52 لڑاکا طیارے پہلی بار دولت اسلامیہ پر بمباری کیلئے تعینات کرنے تیار ہے ۔ یہ امریکہ کی شام اور عراق میں دہشت گردوں کے خلاف مہم کا ایک حصہ ہوگا ۔ B-52 اسٹریٹوفورٹرسٹ طیارے دولت اسلامیہ گروپ پر بمباری کا آغاز اپریل سے کرسکتے ہیں ۔ ایئرفورس ٹائمز کی خبر کے بموجب بمبار طیارے مرکزی کمان ایریا برائے کارروائی کے تحت ہوں گے اور B-1 لانسرس طیاروں کی جگہ لیں گے ۔ آخری لانسر طیارہ جنوری میں وطن واپس آچکا ہے ۔ سرکاری عہدیداروں نے کہا کہ فضائیہ کی اسوسی ایشن کی کانفرنس میں انکشاف کیا گیا کہ B-1طیارے مزید بہتری کیلئے وطن واپس لائے گئے ہیں ۔تاہم یہ واضح نہیں ہوسکا کہ کتنے B-52طیارے یا کتنے ارکان عملہ فضائیہ کی عالمی حملہ آور کمان کے تحت اس کارروائی کیلئے تعینات کئے جائیں گے ۔ فضائیہ نے جو سابق جنگوں میں نشانہ کے تعین کے بغیر بمباری کیا کرتی تھی جیسا کہ افغانستان میں بھی کیا جاچکا ہے ‘ اب بالکل درست نشانوں پر حملہ کرسکے گی ۔ اگر پروگرام کے مطابق ان بمبار طیاروں کو دولت اسلامیہ کے ٹھاکوں پر حملوں کیلئے تعینات کیا جائے تو دولت اسلامیہ کیلئے انتہائی خطرناک ثابت ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT