Saturday , October 21 2017
Home / دنیا / دولت اسلامیہ کنٹرول والے علاقوں میں انٹرنیٹ مسدود کرنے ٹرمپ کا مشورہ

دولت اسلامیہ کنٹرول والے علاقوں میں انٹرنیٹ مسدود کرنے ٹرمپ کا مشورہ

واشنگٹن ۔ 16 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ڈونالڈ ٹرمپ جو امریکی صدارتی انتخابات میں ری پبلکن امیدوار ہیں اور جنہوں نے حالیہ دنوں میں امریکہ میں مسلمانوں کے داخلہ پر امتناع عائد کرنے کا بیان دیتے ہوئے ایک تنازعہ پیدا کردیا تھا، نے آج ایک نیا بیان دیتے ہوئے کہا کہ ایسے علاقے جہاں دولت اسلامیہ کا کنٹرول ہے، وہاں انٹرنیٹ خدمات مسدود کردی جائیں تاکہ دولت اسلامیہ اپنی صفوں میں نئی بھرتیوں کے لئے سوشیل میڈیا کا استعمال نہ کرسکے۔ 69 سالہ ٹرمپ نے صدارتی مباحثہ کے دوران ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ وہ انٹرنیٹ خدمات کو ان علاقوں میں مسدود کرنے کے خواہاں ہیں، جہاں دولت اسلامیہ کا کنٹرول ہے۔ ہمارا ہی انٹرنیٹ استعمال کرکے وہ ہمارے ہی خلاف کارروائی کریں، ایسا کسی بھی امریکی شہری کو منظور نہیں ہوگا۔ ان سے پوچھا گیا تھا کہ کیا وہ انٹرنیٹ خدمات پر جزوی امتناع عائد کرنے تائید کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دولت اسلامیہ سوشیل میڈیا کی مدد سے اپنی صفوں میں نئی بھرتیاں کررہا ہے۔ یہی نہیں بلکہ ان کا (دولت اسلامیہ) انٹرنیٹ استعمال کرنے کا طریقہ ہم سے بہتر ہے۔ سلیکان ویلی میں ہمارے بہترین صلاحیتوں کے حامل اشخاص کی خدمات حاصل کرتے ہوئے دولت اسلامیہ کو وہ سب کچھ کرنے سے روکا جائے جس کا وہ متحمل ہوسکتا ہے اور اس کیلئے اگر ہمارے بہترین دماغوں کا استعمال کیا جائے تو ہمارے لئے بہتر ہوگا جس سے ہمیں اپنے دشمن نمبر 1 دولت اسلامیہ کی حرکات و سکنات اور ان کے محل وقوع کا بھی بآسانی پتہ لگایا جاسکے گا۔

TOPPOPULARRECENT