Saturday , April 29 2017
Home / شہر کی خبریں / دونوں ریاستوں کے چیف منسٹروں سے مسلمان مایوس

دونوں ریاستوں کے چیف منسٹروں سے مسلمان مایوس

مولانا ابوالکلام آزاد کی یوم پیدائش تقریب میں سربراہ کی عدم شرکت
حیدرآباد۔/11نومبر، ( سیاست نیوز) اقلیتوں کی ترقی اور ہمدردی کے دعوے کرنے والے چیف منسٹرس نے آج اقلیتی طبقہ کو مایوس کردیا۔ ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کے یوم پیدائش کو ہر سال ’ یوم اقلیتی بہبود‘ اور ’ یوم تعلیم‘ کے طور پر منایا جاتا ہے۔ متحدہ آندھرا پردیش میں یہ روایت رہی کہ چیف منسٹروں نے ان تقاریب میں شرکت کی لیکن افسوس کہ ریاست کی تقسیم کے بعد سے تلنگانہ اور آندھرا پردیش دونوں ریاستوں کے چیف منسٹرس نے ان تقاریب سے خود کو دور رکھا۔ دلچسپ بات تو یہ ہے کہ دونوں چیف منسٹرس اقلیتوں کی بھلائی اور ان کی ترقی کے بارے میں بلند بانگ دعوے کرنے میں ایک دوسرے پر سبقت لے جانے کی کوشش کرتے ہیں لیکن آج دونوں ریاستوں میں منعقدہ یوم اقلیتی بہبود تقاریب میں ان کی عدم شرکت سے مسلمانوں کو مایوسی ہوئی۔ ریاست کی تقسیم کے بعد سے آج تیسری مرتبہ یوم اقلیتی بہبود کا اہتمام کیا گیا جس میں باوقار ’ مولانا آزاد قومی ایوارڈ ‘ پیش کیا جاتا ہے لیکن دونوں چیف منسٹرس اس تقریب سے غیر حاضر رہے۔ اقلیتوں کے ساتھ سلوک کے معاملہ میں دونوں کا رویہ یکساں دکھائی دیتا ہے۔ یہ ایک اتفاق ہی ہے کہ جاریہ سال حج سیزن میں عازمین حج کو وداع کرنے کیلئے بھی دونوں چیف منسٹرس حاضر نہیں ہوئے تھے جبکہ 2015 میں دونوں نے اپنی ریاست کے عازمین کو وداع کیا تھا۔ اگرچہ مختلف مسائل میں دونوں چیف منسٹرس کی رائے جداگانہ ہے لیکن اقلیتوں کے معاملہ میں دونوں کا طرز عمل یکساں دکھائی دے رہا ہے۔ متحدہ آندھرا پردیش میں وائی ایس راج شیکھر ریڈی اور کرن کمار ریڈی نے یوم اقلیتی بہبود تقاریب میں شرکت کی تھی۔ ہر سال یوم اقلیتی بہبود سے قبل یہ تاثر دیا جاتا ہے کہ چیف منسٹر تقریب میں شرکت کریں گے۔ تلنگانہ میں باقاعدہ دعوت نامے چیف منسٹر کے نام سے شائع کئے گئے اور ایک دن قبل تک یہ تاثر دیا گیا کہ چیف منسٹر شرکت کریں گے لیکن کے سی آر نے صرف ایک پیام جاری کرنے پر اکتفاء کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT