Sunday , September 24 2017
Home / ہندوستان / دو لاکھ روپئے سے زائد رقمی معاملت پر پیان لازمی

دو لاکھ روپئے سے زائد رقمی معاملت پر پیان لازمی

دو لاکھ روپئے سے زائد رقمی معاملت پر پیان لازمیہوٹل بلز ، ہوائی ٹکٹس اور زیورات کی خریدی کیلئے بھی ضروری
نئی دہلی ۔ 15 ۔ ڈسمبر ۔ (سیاست ڈاٹ کام) حکومت نے اندرون ملک کالا دھن پر قابو پانے کیلئے انتہائی سخت قوانین کا اعلان کیا ہے جس کے تحت یکم جنوری سے ہوٹل کے بلز کی ادائیگی یا 50,000 روپئے سے زائد مالیتی غیر ملکی سفری ٹکٹ کیلئے پیان (PAN) کا حوالہ دینا لازمی ہوگا ۔ چھوٹے سرمایہ کاروں کو کسی قدر راحت فراہم کی گئی ہے چنانچہ 50,000 روپئے سے زائد پوسٹ آفس ڈپازٹ کیلئے پیان کی صراحت ضروری نہیں۔ غیر منقولہ جائیداد جس کی مالیت 10 لاکھ روپئے تک ہو، خریدی کیلئے پیان لازمی ہوگا۔ حکومت نے اس معاملہ میں چھوٹے مکانات خریدنے والوں کو راحت فراہم کی ہے کیونکہ پہلے پانچ لاکھ روپئے کی خریدی معاملت پر بھی پیان کو لازمی قرار دینے کی تجویز تھی ۔ ریونیو سکریٹری ہسمکھ ادھیا نے نئے قواعد کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ کالا دھن کا سب سے اہم ذریعہ صرافہ یا زیورات کی خریدی ہے چنانچہ دو لاکھ روپئے سے زائد کی معاملت کیلئے پیان کا حوالہ دینا ضروری ہوگا۔ کیاش کارڈ یا پری پیڈ کے ذریعہ  50,000 روپئے سے زائد نقد ادائیگی اور ساتھ ہی ساتھ ایک لاکھ روپئے یا اس سے زائد مالیت کے حصص کی خریدی کیلئے بھی پیان کارڈ ضروری ہوگا ۔ لوک سبھا میں وزیر فینانس ارون جیٹلی نے کہا کہ حکومت عنقریب اعلامیہ جاری کرتے ہوئے دو لاکھ روپئے سے زائد نقد یا کارڈ کے ذریعہ ادائیگی کی صورت میں پیان کو لازمی قرار دے گی۔

TOPPOPULARRECENT