Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / دھونی ہندوستانی ٹیم کی قیادت سے مکمل مستعفی ، آج کوہلی کی نامزدگی متوقع

دھونی ہندوستانی ٹیم کی قیادت سے مکمل مستعفی ، آج کوہلی کی نامزدگی متوقع

ممبئی ، 5 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) انڈیا کی لمیٹیڈ اوورز کرکٹ کا ایک نیا دور شروع ہونے جارہا ہے کیونکہ نیشنل سلیکٹرز توقع ہے انگلینڈ کے خلاف تین او ڈی آئیز اور تین T20 انٹرنیشنل میچز کیلئے کل یہاں اسکواڈ کا انتخاب کرتے ہوئے ویراٹ کوہلی کو کیپٹن نامزد کردیں گے۔ ٹسٹ کیپٹن کوہلی کو لمیٹیڈ اوورز کی ٹیموں کا بھی کپتان مقرر کیا جانا یقینی ہے، جب کہ مہندرا سنگھ دھونی نے ہندوستان کی ایک روزہ اور ٹی ٹوئنٹی ٹیم کی قیادت سے بھی یکایک استعفیٰ دے دیا۔ تاہم وہ بطور کھلاڑی ٹیم کیلئے  دستیاب ہوں گے۔ کرکٹ بورڈ(بی سی سی آئی) کے کل رات جاری کردہ بیان کے مطابق ’’دھونی نے بورڈ سے ٹیم کی قیادت سے الگ ہونے کی خواہش ظاہر کی‘‘۔ 35 سالہ دھونی استعفیٰ کے بعد انگلینڈ کے خلاف ایک روزہ اور ٹی ٹوئنٹی سیریز میں ٹیم کے کپتان نہیں ہوں گے۔ تاہم وہ ٹیم کے انتخاب کیلئے دستیاب ہوں گے۔ لمیٹیڈ اوورز ٹیم کے کپتان کی حیثیت سے بھی کوہلی جائزہ حاصل کرنے کے تعلق سے کوئی شبہ نہیں ہونا چاہئے لیکن سلیکٹرز کیلئے دو متوازن اسکواڈز کے انتخاب کا کا م کٹھن ضرور ہے کیونکہ حالیہ عرصے میں کئی سرکردہ کھلاڑیوں کو زخم آئے ہیں۔ ممبئی کے دو کلیدی بیٹسمین روہت شرما اور اجنکیا رہانے انجریز کی وجہ سے سلیکشن کیلئے خارج از امکان قرار دیئے جاچکے ہیں۔اس صورتحال میں شکھر دھون کو ’فٹ‘ ہونے پر موقع مل سکتا ہے حالانکہ وہ آؤٹ آف فام دکھائی دیئے ہیں۔ انگلینڈ کی ٹیم اتوار کو ہندوستان واپس ہونے والی ہے۔ وہ او ڈی آئی سیریز 15 جنوری کو پونے میں شروع کریں گے اور آخری T20 میچ یکم فبروری کو بنگلورو میں مقرر ہے۔ بی سی سی آئی کے چیف ایگزیکٹیو آفیسر راہول جوہری کا کہنا ہے کہ ’’بی سی سی آئی اور انڈین کرکٹ کے مداحوں کی جانب سے میں دھونی کا کپتان کے طور پرغیرمعمولی خدمات پر شکریہ ادا کرنا چاہوں گا‘‘۔ انھوں نے کہا کہ دھونی کی قیادت میں انڈین ٹیم نے ترقی کی نئی بلندیوں کو چھوا، اُن کی کامیابیوں کو انڈین کرکٹ میں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔ مہندرا سنگھ دھونی کو ہندوستان کے کامیاب ترین کپتانوں میں سے ایک مانا جاتا ہے، ان کی قیادت میں انڈین ٹیم نے 2007ء میں پہلا ورلڈ ٹی ٹوئنٹی جیتا جبکہ 2011ء میں ہندوستان میں منعقدہ ورلڈ کپ اور چمپینس ٹرافی 2013ء میں چمپئن بننے کا اعزاز حاصل کیا۔  ہندوستانی ٹیم نے دھونی کی قیادت میں 199 ایک روزہ اور 62 ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلے جبکہ 2011ء کے ورلڈ کپ میں چمپئن بننے کے علاوہ 2015ء کے ورلڈکپ کے سیمی فائنل تک رسائی کی۔ اُن کی قیادت میں کھیلے گئے 191 میچوں میں ہندوستان کو 104 میں کامیابی اور 72 میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا جبکہ 62 ٹی ٹوئنٹی میچوں میں سے 36 میں فتح اور 24 میں شکست ہوئی۔ دھونی نے 30 دسمبر 2014ء کو ٹسٹ کرکٹ سے کنارہ کشی کا اعلان کیا تھا جس کے بعد ویراٹ کوہلی کو ٹسٹ کا نیا کپتان مقرر کیا گیا۔ دھونی کی قیادت میں انڈین ٹیم نے 60 ٹسٹ میچز کھیلے جس میں 27 میں فتح اور 18 میں شکست کا سامنا کرنا پڑا جبکہ 15 میچز ڈرا ہوئے۔ ہندوستان نے دھونی کی قیادت میں 2013ء میں 40 سال بعد پہلی مرتبہ آسٹریلیا کو وائٹ واش کرنے کا ریکارڈ بنایا تھا۔

TOPPOPULARRECENT