Saturday , October 21 2017
Home / ہندوستان / دہشت گردانہ واقعات کی لوک سبھا میں مذمت

دہشت گردانہ واقعات کی لوک سبھا میں مذمت

ہندوستان ہر طرح کی دہشت گردی کا مخالف، عالمی برادری کیساتھ ملکر کام کرنیکاعہد
نئی دہلی، 19 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) لوک سبھا نے آج فرانس، بنگلہ دیش، ترکی اور سعودی عرب میں حال ہی میں ہوئے دہشت گردانہ حملوں کی سخت مذمت کرتے ہوئے اس عالمی چیلنج سے نمٹنے میں ملک کی جانب سے ہر ممکن مدد کے عزم کا اعادہ کیا۔لوک سبھا اسپیکر سمترا مہاجن نے صبح ایوان کی کارروائی شروع ہونے کے بعد فرانس کے نیس، سعودی عرب کے جدہ مدینہ کے مقدس شہر قطیف، بنگلہ دیش کے دارالحکومت ڈھاکہ، افغانستان کے کابل اور ترکی کے استنبول شہر میں ہوئے دہشت گردانہ حملوں کے تناظر میں ایوان کے جذبات کا خصوصی ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایوان ان بزدلانہ کارروائیوں کی ایک آواز میں سخت مذمت کرتا ہے اور ان واقعات میں مارے گئے لوگوں کے اہل خانہ کے تئیں گہری تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے دکھ کی اس گھڑی میں ان ممالک کی حکومتوں کے ساتھ اپنی یکجہتی ظاہر کرتا ہے جنہوں نے اس مشکل وقت کا سامنا کرنے میں جرات اور صبر کا ثبوت دیا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ ہندوستان دہشت گردی کی کسی بھی شکل کے خلاف عالمی برادری کے ساتھ مل کر کام کرنے کیلئے پرعزم ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حال میں ہوئے دہشت گردانہ حملوں نے اس برائی سے نمٹنے کے لئے بین الاقوامی سطح پر متحد کارروائی کی ضرورت کی اہمیت کو ایک بار پھر ثابت کیا ہے ۔لوک سبھااسپیکر نے اس موقع پر جموں کشمیر کے پمپور میں سنٹرل ریزرو پولیس فورس کے قافلے پر دہشت گردانہ حملے میں مارے گئے آٹھ جوانوں، بہار میں حالیہ ماؤنوازوں کے حملے میں مارے گئے سی آر پی ایف کے دس کمانڈوز اور مہاراشٹر کے پلگاوں میں فوجی اسلحہ خانہ میں آگ لگنے کے حادثے میں مارے گئے 17 لوگوں کے تئیں بھی ایوان کی جانب سے رنج و غم کا اظہار کیا۔ایوان کی جانب سے اس موقع پر ایک منٹ کی خاموشی اختیار کرکے سبھی کو خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT