Wednesday , October 18 2017
Home / Top Stories / دہشت گردوں کے داخلہ پر امتناع :ٹرمپ

دہشت گردوں کے داخلہ پر امتناع :ٹرمپ

امریکی مسلمانوں کیخلاف پروپگنڈہ پر ٹرمپ کو انتباہ : ہلاری کلنٹن
مانچسٹر، 14 جون (سیاست ڈاٹ کام) فلوریڈا صوبے کے اورلینڈو واقع ہم جنس پرستوں کے کلب میں ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد ریپبلکن پارٹی کے صدارتی ممکنہ امیدوار ڈونالڈ ٹرمپ نے امریکہ کے امیگریشن پالیسی پرتنقید کرتے ہوئے کہا کہ اگر وہ اقتدار میں آتے ہیں تو’ایسے ممالک کے لوگوں کو امریکہ میں داخلے پر روک لگائیں گے جن ممالک میں مغربی ممالک کے خلاف دہشت گردی پنپنے کی تاریخ’رہی ہے ۔انہوں نے نیو ہیمپشائر کے مانچسٹر میں کل کہا کہ آٹھ نومبر کو ہونے والے صدارتی انتخابات میں اگر وہ کامیاب ہوئے تو صدر کے ایگزیکٹوحقوق کا استعمال کرتے ہوئے امیگریشن پالیسیوں میں تبدیلی کریں گے ۔ ان کے انتخابی مہم کے اہم ایشوز میں سے امیگریشن پالیسی بھی ایک ہے ۔ انہوں نے کہا ”جب میں صدر بن جاؤں گا تو اپنی طاقت کا استعمال امریکی لوگوں کو بچانے کے لئے کروں گا۔ امریکہ، یورپ یا ہمارے حلیفوں کے خلاف جن ملکوں میں دہشت گردی پنپنے کی تاریخ رہی ہے وہاں کے شہریوں کو امریکہ میں آنے سے تب روک لگائیں گے جب تک ہم مکمل یہ نہ سمجھ لیں کہ ان خطرات سے کیسے نمٹنا ہے ”۔  ٹرمپ نے کہا کہ امیگریشن پر ان کی مجوزہ روک عارضی ہوگی اور تب تک رہے گی جب تک ”ایک قوم کے طور پر ہم ان کی مکمل تحقیقات کرنے کی پوزیشن میں نہ پہنچیں۔ فی الحال وہ یہاں آ رہے ہیں اور کیا کر رہے اس کا ہمیں پتہ نہیں ہے ”۔ٹرمپ کے اس بیان پر ڈیموکریٹک پارٹی سے صدارتی ممکنہ امیدوار ہلیری کلنٹن نے انہیں امریکی مسلمانوں کے خلاف پروپیگنڈہ نہ کرنے کی وارننگ دی۔ انہوں نے وعدہ کیا کہ اگر وہ صدر بنیں تو ایسے ’’حملہ آوروں‘‘کی شناخت اور ان کو روکنے کواپنی ترجیح دیں

TOPPOPULARRECENT