Friday , September 22 2017
Home / دنیا / دہشت گردی اور اسرائیل سیمسلم ممالک کے تحفظ کا عہد

دہشت گردی اور اسرائیل سیمسلم ممالک کے تحفظ کا عہد

صدرایران حسن روحانی کا بیان‘ یوم مسلح افواج پریڈ سے خطاب
تہران۔17اپریل ( سیاست ڈاٹ کام ) صدر ایران حسن روحانی نے آج عہد کیا کہ دہشت گردی اور  اسرائیل کے خلاف مسلم ممالک کا دفاع کریں گے ۔ انہوں نے پُرزور انداز میں کہا کہ اس کے پڑوسی ممالک کو ایران سے خطرہ محسوس نہیں کرنا چاہیئے ۔ قومی یوم مسلح  افواج پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے صدر ایران نے کہا کہ ایرانی افواج نے جدید ترین فضائی ‘ دفاعی نظاموں کی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے جنہیں حال ہی میں روس سے حاصل کیا گیا ہے ۔ صدر ایران نے شام اور عراق کی حکومتوں کو دولت اسلامیہ کے خلاف جنگ میں ایران کے کردار کی ستائش کرتے ہوئے کہا کہ اگر کل آپ کے دارالحکومتوں کو دہشت گردی یا صیہونیت سے خطرہ پیدا ہوجائے تو آپ کی اپیل پر مثبت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے اسلامی جمہوریہ ایران آپ کو تقویت دے گا ۔ انہوں نے کہا کہ ایران نہ صرف مسلم ممالک کی اپیل پر ان کی مدد کرے گا بلکہ اس کی فوجی طاقت صرف دفاع اور ڈھاک قائم رکھنے کے مقصد سے ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری مسلح افواج کسی بھی جنوبی ‘ شمالی ‘ مشرقی اور مغربی پڑوسیوں کے خلاف نہیں ہے ۔ ایسا معلوم ہوتاہے کہ وہ خلیجی عرب ممالک کا حوالہ دے رہے تھے جو ایک طویل عرصہ سے ایران کو ایک ایسا ملک سمجھتے ہیں جو اس علاقہ پر اپنی اجارہ داری قائم کرنا چاہتا ہے ۔

سعودی عرب اور ایران دیرینہ حریف ممالک ہیں جو شام اور یمن کی خانہ جنگیوں میں مخالف طاقتوں کی مدد کررہی ہیں ۔ پریڈ کے دوران فوج نے روسی ساختہ ایس ۔300 فضائی ‘ دفاعی میزائلس کی کارکردگی کا مظاہرہ کیا جو جاریہ ماہ کے اوائل میں اسے سربراہ کئے گئے ہیں ۔ 2010ء میں روس نے معاہدہ پر عمل آوری اور ایران کو جدید ترین نظاموں کی سربراہی روک دی تھی ۔ اقوام متحدہ کے تحدیدات برخواست کرنے کے فیصلہ کے بعد اس کا احیاء کیا گیا ۔2010ء میں روس نے تحدیدات سے مربوط اپنی سربراہی روک دی تھی ۔ صدر روس ولادیمیر پوٹن نے گذشتہ سال ایران کے 6 عالمی طاقتوں سے معاہدہ کے بعد اپنی سربراہی کا احیاء کیا ہے ۔ امریکہ اور اسرائیل نے روسی  میزائل نظاموں کی ایران کو فروخت پر فکرمندی ظاہر کی ہے ‘ انہیں اندیشہ ہے کہ اس سے علاقائی فوجی طاقت کا توازن بگڑسکتا ہے ۔ ایران نے پریڈ میں دبابو ‘ ہلکی سب مشن گنوں ‘ مختصر مسافتی میزائل اور دیگر ہتھیاروں کا بھی مظاہرہ کیا ۔

TOPPOPULARRECENT