Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / دہشت گردی پر اختلافات کے تمام ممالک متحمل نہیں ہوسکتے

دہشت گردی پر اختلافات کے تمام ممالک متحمل نہیں ہوسکتے

The Prime Minister, Shri Narendra Modi meeting the President of the People's Republic of China, Mr. Xi Jinping, before the BRICS Summit, in Goa on October 15, 2016.

مسعود اظہر پر امتناع کی کوشش میں رکاوٹ پر ناراضگی ،این ایس جی رکنیت کیلئے مذاکرات،مودی ۔ ژی جن پنگ ملاقات

بناولم(گوا )۔/15اکٹوبر، ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے آج چین پر واضح کیا ہے کہ دہشت گردی سے نمٹنے کے مسئلہ پر اختلافات کے تمام ممالک متحمل نہیں ہوسکتے۔ اس کے علاوہ اقوام متحدہ نامزد جیش محمد سربراہ مسعود اظہر کو عالمی دہشت گرد قراردینے کی کوششوں میں بیجنگ کی رکاوٹ پر تشویش بھی ظاہر کی۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے صدر چین ژی جن پنگ کے ساتھ آج ہوئی ملاقات کے دوران ہندوستان کے اس موقف سے واقف کرایا۔ یہ ملاقات ایسے وقت ہوئی جبکہ چین نے مسعود اظہر کو جو پٹھان کوٹ دہشت گرد حملہ کا اصل سازشی ہے، اقوام متحدہ کی جانب سے امتناع عائد کرنے کی ہندوستان کی کوششوں میں چین رکاوٹ بن رہا ہے۔ برکس چوٹی اجلاس کے کل آغاز سے پہلے یہ ملاقات ہوئی۔ دونوں ممالک نے ہندوستان کی نیوکلیر سپلائیر گروپ ( این ایس جی ) رکنیت کیلئے دوسرے دور کی بات چیت بھی شروع کریں گے۔ ہندوستان نے توقع ظاہر کی ہے کہ اس بات چیت میں اختلافات کو دور کیا جاسکے گا۔ ژی جن پنگ نے کہا کہ یہ مذاکرات معاون و مددگار ثابت ہوں گے۔

دہشت گردی کے بارے میں مودی نے ژی جن پنگ کو بتایا کہ ہندوستان اور چین دونوں دہشت گردی کا شکار ہوئے ہیں اور یہ علاقہ اس لعنت سے متاثر ہورہا ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ کوئی بھی ملک دہشت گردی کے اثر سے محفوظ نہیں۔ اس مسئلہ پر ہم اختلافات کے متحمل نہیں ہوسکتے۔ وزارت اُمور خارجہ کے ترجمان وکاس سوروپ نے اجلاس کے بعد ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے یہ تفصیلات بتائی۔ انہوں نے کہا کہ مودی نے یہ واضح کیا کہ ہندوستان اور چین کو اقوام متحدہ 1267 کمیٹی کے پس منظر میں باہمی روابط میں اضافہ کرنا چاہیئے۔ اقوام متحدہ کی جانب سے مسعود اظہر کو نامزد دہشت گرد قرار دینے نئی دہلی کی کوششوں میں بیجنگ کی رکاوٹ پر ہندوستان نے ناراضگی ظاہر کی تھی۔ سوروپ نے کہا کہ دونوں ممالک نے یہ بات تسلیم کی کہ دہشت گردی کلیدی مسئلہ ہے۔ صدر چین نے کہا کہ دونوں ممالک کو سیکوریٹی مذاکرات اور پارٹنر شپ مستحکم بنانا چاہیئے۔ سوروپ  نے بتایا کہ مسعود اظہر پر اقوام متحدہ کے امتناع کے سلسلہ میں چین کے ساتھ بات چیت جاری ہے اور ہندوستان کو توقع ہے کہ چین اس معاملہ میں مثبت نتیجہ پر پہنچے گا۔

TOPPOPULARRECENT