Wednesday , October 18 2017
Home / Top Stories / دہشت گردی کا سامنا کرنے اور اسے شکست دینے کی ضرورت

دہشت گردی کا سامنا کرنے اور اسے شکست دینے کی ضرورت

امریکہ ‘ اسرائیل کی سلامتی اور سکیوریٹی کے عہد کا پابند ۔ صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ کا ہفتہ وار ریڈیو خطاب

واشنگٹن 18 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا کہ دہشت گردی کے خطرہ سے نمٹتے ہوئے اسے شکست دی جانی چاہئے ۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار بھی کیا کہ ان کے انتظامیہ کی جانب سے یہ کامیابی حاصل کی جائیگی ۔ انہوں نے کل شام قوم سے اپنے ہفتہ وار ریڈیو خطاب میں کہا کہ دہشت گردی کا خطرہ ہے ۔ ان پر یقین کیا جانا چاہئے کہ اس خطرہ کا سامنا کیا جایئگا اور اسے شکست دی جائیگی ۔ ہم اسے شکست دینگے ۔ ٹرمپ نے جاریہ ہفتے کے اوائل میں جب اسارئیلی وزیر اعظم بنجامن نتن یاہو سے ملاقات کی تھی کہا تھا کہ امریکہ اسرائیل کی سلامتی اور سکیوریٹی کے عہد کا پابند ہے ۔ انہوں نے کہا تھا کہ یہ ان کیلئے اعزاز ہے کہ وہ اپنے دوست وزیر اعظم بنجامن نتن یاہو کا وائیٹ ہاوز میں خیر مقدم کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ امریکہ کا اسرائیل کے ساتھ انتہائی مضبوط تعلق ہے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ وزیر اعظم نتن یاہو کو تیقن دینا چاہتے ہیں کہ امریکہ اسرائیل کے ساتھ مل کر کام کرنے کے عہد کا پابند ہے اور ہمارے حلیف اور شراکت داروں کو بھی دنیا میں سکیوریٹی اور استحکام پیدا کرنے کیلئے ساتھ لے کر کام کیا جائیگا ۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ اسرائیل کے ساتھ ایک عزم ہے کہ تمام معصوم انسانی جانوں کا تحفظ کیا جائے ۔ ٹرمپ نے کہا کہ ان کے انتظامیہ نے اپنے ابتدائی چند ہفتوں میں ایسے بے سود قوانین کو ختم کرنے کیلئے اقدامات کئے ہیں جو عوام کو کام سے محروم کر رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ وہ ایک طویل وقت سے کہہ رہے تھے کہ وہ ایسے اقدامات کرینگے ۔ اس ہفتے انہوں نے دو قوانین پر دستخط کئے ہیں تاکہ ہماری معیشت پر بوجھ میں کمی ہو ۔ وہ امریکی عوام سے کئے گئے اپنے وعدوں کو پورا کرنے کے اقدامات جاری رکھیں گے اور بھی بہت کچھ کرینگے۔

میڈیا ‘ امریکی عوام کا دشمن : ڈونالڈ ٹرمپ
واشنگٹن 18 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) میڈیا کے خلاف اپنی تنقیدوں میں شدت پیدا کرتے ہوئے صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ نے کہا کہ صحافت امریکی عوام کی دشمن ہے ۔ انہوں نے اپنے آبائی ٹاؤن فلوریڈا میں آمد کے فوری بعد اپنے ٹوئیٹ میں یہ بات کہی ۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا ان کا دشمن نہیں بلکہ امریکی عوام کا دشن ہے ۔ ٹرمپ نے اس سے قبل بھی ایک پوسٹ ٹوئیٹ کیا تھا جس میں انہوں نے نیویارک ٹائمز ‘ سی این این اور این بی سی اور دوسرے میڈیا پر بھی تنقید کی تھی ۔ بعد ازاں انہوں نے اس پوسٹ کو فوری حذف کردیا تھا اور بعد میں اس میں مزید دو ناموں کا اضافہ کرتے ہوئے ٹوئیٹ کیا ہے ۔ حالانکہ امریکہ کے کئی صدور نے میڈیا پر تنقیدیں کی ہیں لیکن ٹرمپ کی جو زبان ہے وہ دنیا بھر میں آمرانہ طرز اختیار کرنے والے قائدین کی زبان کی طرح ہے ۔ ٹرمپ باقاعدہ طور پر میڈیا کو حذف ملامت بناتے ہیں اور انہوں نے صحافیوں پر الزام عائد کیا تھا کہ وہ ان کی کامیابیوں کا احترام نہیں کرتے ۔

 

ٹرمپ کے فرزندان ایرک اور ڈونالڈ جونئیر کی دوبئی آمد
دوبئی 18 فبروری ( سیاست ڈاٹ کام ) امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے دو فرزندان ٹرمپ انٹرنیشنل گولف کلب کے دوبئی افتتاح کیلئے متحدہ عرب امارات پہونچے ہیں۔ ایرک اور ڈونالڈ جونئیر نے آج دوپہر میں ایک خانگی ظہرانہ میں شرکت کی جس میں ان کے کاروباری شریک حسین سجوانی بھی شریک تھے ۔ ان کی کمپنی ٹرمپ کے ساتھ گولف کورس میں شراکت دار ہے ۔ سوشیل میڈیا پر ایک رئیل اسٹیٹ بروکر کی جانب سے اس ظہرانے کی تصاویر پیش کی گئی ہیں جن میں ٹرمپ کے دونوں فرزندان کو دکھایا گیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT