Thursday , August 24 2017
Home / عرب دنیا / دہشت گردی کو ختم کرنے مشترکہ کارروائی کرنے کا عزم

دہشت گردی کو ختم کرنے مشترکہ کارروائی کرنے کا عزم

جی 20 چوٹی کانفرنس کے بعد عالمی قائدین کا بیان ۔ دہشت گردوں کی فینانس روکنے کیلئے بھی موثر اقدامات پر زور
انطالیہ 16 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) دنیا کے امیر ترین اور طاقتور ممالک کے قائدین نے عالمی سطح پر بڑھتی ہوئی دہشت گردی کو ختم کرنے کیلئے مشترکہ کارروائی کا عزم ظاہر کیا ہے اور کہا کہ دہشت گردوں کے معاشی چینلس کو بھی ختم کرنے مشترکہ کوششوں کی ضرورت ہے ۔ انطالیہ چوٹی کانفرنس کو G-
20 کی ایسی پہلی کانفرنس قرار دیا جا رہا ہے جس میں معیشت اور تجارت کے سوا دوسرے مسائل پر اظہار خیال کیا گیا ہے ۔ اس چوٹی کانفرنس میں پیرس حملوں کی مذمت کی گئی ہے جبکہ دہشت گردی کے خلاف اتحاد کا مظاہرہ کرنے پر زور دیا گیا ہے ۔ ترکی کے صدر رجب طیب اردغان نے عالمی چیلنجس ‘ دہشت گردی و نقل مقام پر ایک عشائیہ کا اہتمام کیا تھا جس کے بعد یہ بیان جاری کیا گیا ہے ۔ اس عشائیہ میں وزیر اعظم نریندر مودی نے یہ واضح کردیا تھا کہ کچھ ممالک ابھی بھی دہشت گردی کو سرکاری پالیسی کا حصہ برقرار رکھے ہوئے ہیں اور ضرورت اس بات کی ہے کہ انہیں یکا و تنہا کردیا جائے اور دہشت گردوں کو معاشی امداد کو مجرمانہ عمل سمجھا جائے ۔ مودی نے کہا کہ ہمارے پاس کوئی جامع عالمی حکمت عملی نہیں ہے کہ ہم دہشت گردی کا مقابلہ کرسکیں۔ ہم دہشت گردی سے نمٹنے میں بھی منتخبہ نشانوں پر کام کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سب سے اہم بات یہ ہے کہ ہم کو جو خطرہ درپیش ہے ہم اس کا کس طرح سے سامنا کرسکتے ہیں۔ دو روزہ جی 20 چوٹی کانفرنس کے اختتام کے بعد مشترکہ بیان جاری کیا گیا ہے جس میں عالمی قائدین نے واضح کردیا ہے کہ دہشت گردی کو کسی مذہب سے ‘ کسی قوم سے اور کسی نسلی گروپ سے نہیں جوڑا جاسکتا۔ جی 20 قائدین بشمول صدر امریکہ بارک اوباما ‘ روس کے صدر ولادیمیر پوٹین نے پیرس حملوں کی انتہائی سنگین قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی اور یہ اعادہ کیا کہ دہشت گردی سے نمٹنے میں یہ سب متحد رہیں گے۔ بیرونی دہشت گرد لڑاکوں کے بہاؤ  میں اضافہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان قائدین نے مطالبہ کیا کہ سرحدات پر کنٹرول میں شدت پیدا کی جانی چاہئے اور ہوابازی سکیوریٹی پر توجہ کی ضرورت ہے ۔ ان قائدین نے کہا کہ دہشت گردی کی فینانسگ کے چینلس کو روکنے کیلئے بھی باہمی تعاون کی ضرورت ہے اور دہشت گردوں کے اثاثہ جات کو منجمد کرنے اطلاعات کا تبادلہ ہونا چاہئے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ گروپ 20 کے قائدین نے دہشت گردی کے فینانسنگ چینلس سے نمٹنے اقدامات کی ضرورت پر زور دیا ہے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ دہشت گردی اور دہشت گردانہ فینانسگ کے خلاف معاشی تحدیدات عائد کرنے کی بھی ضرورت ہے ۔ ان قائدین نے ایک فینانشیل ایکشن ٹاسک فورس کو متحرک کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا ہے ۔ انطالیہ اعلامیہ میں عالمی نقل مقام مسئلہ پر بھی اظہار خیال کیا گیا ہے اور تمام ممالک سے کہا گیا ہے کہ وہ مہاجرین کے مسئلہ کو حل کرنے میں تعاون کریں۔ گروپ 20 قائدین نے دہشت گردانہ کارروائیوں کو کچلنے اقوام متحدہ چارٹر کے دائرہ کار میں مل جل کر کام کرنے کا عزم ظاہر کیا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT