Sunday , March 26 2017
Home / دنیا / دہشت گردی کی سرکوبی کیلئے باہمی تعاون سے اتفاق

دہشت گردی کی سرکوبی کیلئے باہمی تعاون سے اتفاق

بحر ہند کے ممالک کی تنظیم آئیورا چوٹی کانفرنس کا اعلامیہ، پرتشدد انتہا پسندی کی مذمت
جکارتہ 7 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) حکمت عملی کی کلیدی اہمیت کے حامل بحرہند اور اس کے اطراف واقع 20 ممالک نے جن میں ہندوستان بھی شامل ہے، دہشت گردی اور پرتشدد انتہا پسندوں کی سرکوبی کی کوششوں میں ایک دوسرے کی مدد کرنے کا فیصلہ کیا اور اس ضمن میں معلومات اور تجربات کے تبادلوں سے اتفاق کیا۔ انڈین اوشین ایم اسوسی ایشن (آئی او آر اے) کے قائدین نے جن میں نائب صدرجمہوریہ ہند حامد انصاری بھی شامل ہیں۔ دہشت گردی کے انسداد اور سرکوبی کے لئے اقوام متحدہ کی تمام قراردادوں اور اس لعنت کی حوصلہ شکنی کے لئے تمام بین الاقوامی اعلامیوں پر مؤثر عمل آوری کے لئے اصرار کیا۔ بحر ہند کے اطراف و اکناف واقع 20 اہم ممالک کے قائدین نے پرتشدد انتہا پسندی کے خلاف کارروائیوں کے دوران تمام بین الاقوامی قوانین اور انسانی حقوق کو ملحوظ رکھنے کے عہد کا اعادہ کیا۔ بحرہند کے ممالک کی یہ تنظیم جو آئیورا کے مخفف سے بھی معروف ہے اپنی پہلی چوٹی کانفرنس کے دوران دہشت گردی اور پرتشدد انتہا پسندی کے خلاف مقابلے اور اس لعنت کے خاتمے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے ایک اعلامیہ بھی جاری کیا۔ نیز اس حقیقت کو تسلیم کیا گیا کہ کسی بھی قسم اور شکل کی دہشت گردی علاقائی و بین الاقوامی امن و سلامتی کے لئے سنگین خطرہ ہے جس سے نہ صرف معاشی ترقی متاثر ہوتی ہے بلکہ سماجی جبر و استبداد بھی بڑھتا ہے۔

آئیورا قائدین نے اپنے اعلامیہ میں یہ فیصلہ بھی کیاکہ تمام رکن ممالک دہشت گردی اور پرتشدد انتہا پسندی سے لاحق خطرات کا مقابلہ کرنے کی کوششوں میں وہ ایک دوسرے کی مدد کریں گے۔ ان کوششوں میں اور معلومات اور تجربات کا باہمی تبادلہ بھی شامل ہے۔ رکن ممالک نے دہشت گردی اور تشدد کے پھیلنے کی وجوہات کا پتہ چلانے اور اس کا سدباب کرنے کی ضرورت پر بھی قرار دیا۔ آئیورا اعلامیہ نے اولیائے طلباء، اساتذہ، مقامی قائدین، سیول سوسائٹی اور تعلیم کے شعبوں میں سرگرم جہدکاروں پر بھی زور دیا کہ وہ نوجوانوں کو تشدد اور دہشت گردی کی طرف سے راغب ہونے سے روکنے کی کوشش کریں۔ اعلامیہ نے پرتشدد انتہا پسندی کو کسی مذہب، نسلی گروپ، تہذیب یا قومیت سے مربوط کرنے کی کسی بھی کوشش کو مسترد کردیا۔ بحر ہند ممالک کی اس تنظیم ’’آئیورا‘‘ میں ہندوستان، آسٹریلیا، بنگلہ دیش، ایران، کینیا، کموروس، مداغاسکر، ملایشیا، ماریشیس، موزمبیق، سلطنت عمان، سیچلیس، سنگاپور، صومالیہ، جنوبی افریقہ، سری لنکا، تنزانیہ، تھائی لینڈ، متحدہ عرب امارات اور یمن شامل ہیں۔ امریکہ، برطانیہ، چین، مصر ، فرانس، جرمنی اور جاپان اس کے مذاکراتی ساجھیدار ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT