Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / دہلی، تلنگانہ اور آندھراپردیش کے عازمین حج پر اضافی بوجھ

دہلی، تلنگانہ اور آندھراپردیش کے عازمین حج پر اضافی بوجھ

دیگر ریاستوں کے عازمین کو کم اخراجات، حیدرآباد کے عازمین مختلف زمروں میں تقسیم

حیدرآباد۔5جون (سیاست نیوز) ملک میں حج کمیٹی کے توسط سے حج بیت اللہ کی سعادت حاصل کرنے والے عازمین میں سب سے زیادہ رقم ادا کرنے والے تین ریاستوں کے عازمین میں دوسرے نمبر پر ریاست تلنگانہ و آندھرا پردیش کے عازمین شامل ہیں جبکہ دہلی سے روانہ ہونے والے عازمین ملک بھر کے عازمین میں سب سے زیادہ اخراجات ادا کرتے ہوئے حج بیت اللہ کی سعادت حاصل کر رہے ہیں۔ ہندستان میں جملہ 18مقامات سے حج بیت اللہ کے لئے پروازیں چلائی جاتی ہیں اور دہلی سے کیا جانے والا سفر سب سے مہنگا ثابت ہو رہا ہے جبکہ حیدرآباد سے کیا جانے والا سفر مقدس اخراجات کے اعتبار سے دوسرے نمبر پر ہے۔ حج کمیٹی آف انڈیا کی جانب سے عازمین حج کیلئے دو زمرے رکھے گئے ہیں جن میں گرین اور عزیزیہ شامل ہیں۔ دہلی سے حج بیت اللہ کی ادائیگی کیلئے روانہ ہونے والے عازمین کو جو گرین زمرے میں شامل ہیں 2لاکھ 21ہزار 50روپئے ادا کرنے ہیں اور عزیزیہ زمرے کے عازمین کو 1لاکھ87ہزار150روپئے ادا کرنے ہوں گے۔ اسی طرح حج کمیٹی نے حیدرآباد سے پرواز کرنے والے عازمین کیلئے جو رقم مختص کی گئی ہے اس کے اعتبار سے انہیں گرین زمرے کیلئے 2لاکھ 20ہزار 550روپئے ادا کرے ہوں گے جبکہ عزیزیہ زمرے کے عازمین کو 1لاکھ 86ہزار 650 روپئے ادا کرنے ہوں گے۔ مرکزی حج کمیٹی نے منتخبہ عازمین حج جو 81ہزار روپئے بطور پہلی قسط ادا کر چکے ہیں ان کیلئے مابقی رقم ادا کرنے کی تفصیلات جاری کردی ہیں اور مابقی رقم جمع کروانے کی آخری تاریخ 2جولائی مقرر کی گئی ہے۔ جناب عطا الرحمن سی ای او سنٹرل حج کمیٹی نے آج جاری کردہ ایک اعلامیہ میں جو تفصیلات جاری کی ہیں ان کے مطابق طیرانگاہ حیدرآباد سے پرواز کرنے والے گرین زمرے کے عازمین حج کو 1لاکھ 39ہزار 550روپئے 2جولائی سے قبل ادا کرنے ہوں گے اور عزیزیہ زمرے کے عازمین کو جو حیدرآباد سے روانہ ہوں گے انہیں مابقی رقم 1لاکھ5ہزار 650روپئے ادا کرنے ہوں گے۔ جناب عطاالرحمن کے بموجب ملک کے جن 18مقامات سے پروازیں روانہ ہوں گی ان میں احمدآباد ‘ اورنگ آباد ‘ بنگلورو ‘ بھوپال و ناگپور ‘ چینائی ‘ کوچن ‘ دہلی ‘ گیا و اندور ‘ گوا‘ گوہاٹی ‘ حیدرآباد‘ جئے پور ‘کولکتہ و لکھنؤ‘ منگلور ‘ ممبئی ‘ رانچی‘ سرینگر اور واراناسی شامل ہیں۔ دہلی اور حیدرآباد کے بعد سب سے زیادہ رقم ممبئی سے روانہ ہونے والے عازمین سے وصول کی جا رہی ہے جہاں گرین زمرے کے عازمین کو جملہ 2لاکھ19ہزار950روپئے ادا کرنے ہوں گے اورعزیزیہ زمرے کے عازمین کو جملہ 1لاکھ86ہزار50روپئے ادا کرنے ہوں گے۔ چینائی سے روانہ ہونے والے عازمین جو گرین زمرے میں شامل ہیں انہیں 2لاکھ 19ہزار250روپئے ادا کرنے ہوں گے جبکہ عزیزیہ زمرے کے عازمین کو 1لاکھ85ہزار 350اداکرنے ہوں گے۔ بنگلورو سے روانہ ہونے والے گرین زمرے کے عازمین کو جملہ 2لاکھ19ہزار 900روپئے ادا کرنے ہوں گے جبکہ عزیزیہ زمرے کے عازمین کیلئے 1لاکھ 86ہزار روپئے جملہ رقم مختص کی گئی ہے۔ ہندستان میں ملک کے مختلف مقامات سے روانہ ہونے والے عازمین کیلئے علحدہ علحدہ رقومات کی تخصیص کی تفصیل جاری کردی گئی ہے۔ گیا (بہار) اور اندور سے روانہ ہونے والے عازمین سے سب سے کم اخراجات وصول کئے جا رہے ہیں ۔ ان مقامات سے روانہ ہونے والے گرین زمرے کے عازمین کیلئے جملہ رقم 2لاکھ 17ہزار150روپئے مختص کی گئی ہے جبکہ عزیزیہ زمرے کے عازمین کیلئے 1لاکھ83ہزار250روپئے رقم مختص کی گئی ہے۔ حیدرآباد سے روانہ ہونے والے عازمین میں نہ صرف ریاست تلنگانہ و آندھرا پردیش کے عازمین شامل ہیں بلکہ پڑوسی ریاست کرناٹک کے بعض اضلاع کے عازمین بھی حیدرآباد کے ذریعہ ہی حج بیت اللہ کے مقدس سفر کیلئے پرواز کرتے ہیں۔مرکزی حج کمیٹی کی جانب سے جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق اسلامک ڈیولپمنٹ بینک کے ذریعہ قربانی کروانے کے خواہشمند عازمین حج کو اضافی 8160روپئے فی کس جمع کروانے ہوں گے۔ علاوہ ازیں رباط کی سہولت حاصل کرنے والے عازمین کی رقومات کی تفصیلات بھی جاری کر دی گئی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT