Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / دہلی میں احتجاجی دھرنا منظم کرنے کا انتباہ

دہلی میں احتجاجی دھرنا منظم کرنے کا انتباہ

آندھرا پردیش سے نا انصافی کی شکایت ، جگن کی کسانوں سے ملاقات
حیدرآباد ۔ 28 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی مسٹر جگن موہن ریڈی نے آندھرا پردیش کو خصوصی ریاست کا درجہ دلانے کے لیے دہلی میں 67 ارکان اسمبلی اور 7 ارکان پارلیمنٹ کے ساتھ دہلی میں بڑے پیمانے پر احتجاجی دھرنا منظم کرنے کا انتباہ دیا ہے ۔ چندرا بابو نائیڈو اور راہول گاندھی کو بھی سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے ۔ ضلع اننت پور میں کسان بھروسہ یاترا منظم کرنے والے جگن موہن ریڈی نے خود کشی کرنے والے کسانوں کے ارکان خاندان سے ملاقات کی ۔ ان کے مفادات کا تحفظ کرنے کے لیے حکومت سے آر پار لڑائی لڑنے کا انہیں تیقن دیتے ہوئے حالت سے گھبرا کر خود کشی نہ کرنے کا مشورہ دیا ۔ آندھرا پردیش میں کسانوں کی ابتر صورتحال اور زرعی بحران کو اسمبلی و پارلیمنٹ میں موضوع بحث بنانے کا اعلان کیا ۔ قائد اپوزیشن مسٹر جگن موہن ریڈی نے کہا کہ وائی ایس آر کانگریس پارٹی اتنے بڑے پیمانے پر احتجاج کرے گی جس سے تلگو دیشم اور این ڈی اے حکومت دنگ رہ جائے گی انہوں نے کہا کہ اس کسان بھروسہ یاترا نے سارے ملک میں مقبولیت حاصل کی ہے ۔ کسانوں کے مسائل کو وہ قومی مسئلہ بنانے میں کامیاب ہوئے ہیں جس کے بعد ہی کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے ضلع اننت پور کا دورہ کرتے ہوئے خود کشی کرنے والے کسانوں کے ارکان خاندان سے ملاقات کی ہے ۔ مسٹر جگن موہن ریڈی نے کہا کہ کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے کبھی پارلیمنٹ میں اپوزیشن کا تعمیری رول ادا نہیں کیا اور نہ ہی تقسیم آندھرا پردیش کے موقع پر بل میں آندھرا پردیش کو جو سہولتیں ، رعایتیں اور اسکیمات کا اعلان کیا گیا ہے ۔ اس پر عمل آوری کے لیے این ڈی اے حکومت پر دباؤ ڈالا ہے ۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی واحد جماعت ہے جو آندھرا پردیش کے مسائل کی یکسوئی کے لیے جدوجہد کررہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ قرضوں کی معافی کے نام پر چیف منسٹر آندھرا پردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے کسانوں اور ڈاکرا گروپس کی خواتین کو دھوکہ دیا ہے ۔ بیروزگار نوجوانوں کو روزگار دینے کا وعدہ کرتے ہوئے ان کے جذبات سے کھلواڑ کیا جارہا ہے ۔ کسانوں کے قرضہ جات معاف نہ کرنے کی وجہ سے کسان خود کشی کرنے کے لیے مجبور ہورہے ہیں ۔ پوسٹ مارٹم رپورٹ ہونے کے باوجود خود کشی کرنے والے کسانوں کے ارکان خاندان کو 5 لاکھ روپئے ایکس گریشیا نہ دینے کا الزام عائد کیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT