Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / دہلی میں ڈیزل گاڑیوں کے رجسٹریشن پر امتناع کا اشارہ

دہلی میں ڈیزل گاڑیوں کے رجسٹریشن پر امتناع کا اشارہ

نئی دہلی 15 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) آلودگی کی سطح میں خطرناک اضافہ پر تشویش کے دوران سپریم کورٹ نے آج اشارہ دیا ہے کہ عدالت کی جانب سے دہلی میں کم از کم تین تا چار مہینوں کیلئے ڈیزل سے چلنے والی ایس یو ویز اور ان کاروں کے رجسٹریشن پر امتناع عائد کیا جاسکتا ہے جو 2000 سی سی سے زیادہ پاور کی ہوں۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ دہلی میں داخل ہونے والے ٹرکس پر گرین سیس میں 100 فیصد اضافہ بھی کیا جاسکتا ہے ۔ عدالت نے 12 اکٹوبر کو حکم دیا تھا کہ جو لائیٹ ڈیوٹی گاڑیاں دہلی میں داخل ہونگی وہ 700 روپئے اور بڑی گاڑیاں 1300 روپئے گرین سیس ادا کرینگی ۔ یہ سیس ٹول ٹیکس کے علاوہ ہوگا ۔ ایسے اقدامات کا مقصد دہلی میں آلودگی کو کم کرنا ہے ۔ یہ سیس ماحولیاتی معاوضہ چارچ کے طور پر وصول کیا جائیگا ۔ چیف جسٹس ٹی ایس ٹھاکر کی قیادت والی ایک بنچ نے کہا کہ عدالت کی جانب سے ماحولیاتی معاوضہ چارچ میں صدفیصد اضافہ کیا جاسکتا ہے ۔ یہ سیس دہلی کے باہر کی ریاستوں کو جانے کیلئے دہلی کی سڑکوں کو استعمال کرنے والی گاڑیوں پر عائد ہوگا ۔ عدالت کی جانب سے اضافہ کے بعد لائیٹ گاڑیوں کیلئے 1400 اور بھاری گاڑیوں کیلئے 2600 روپئے ادا کرنا ہوگا ۔

TOPPOPULARRECENT